تازہ ترین
  • بریکنگ :- خواجہ آصف کہتاہےامریکانےہمیں وینٹی لیٹرپررکھا ہوا ہے،عمران خان
  • بریکنگ :- خواجہ آصف سےپوچھتا ہوں ملک کووینٹی لیٹرپرڈالاکس نے؟عمران خان
  • بریکنگ :- 30 سال سے 2خاندان حکمرانی کرتےرہے،قوم کومقروض کردیا،عمران خان
  • بریکنگ :- پہلےمقروض کیا،اب کہتےہیں امریکاکی غلامی نہ کی تومرجائیں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- لاہور:کسی ملک کے خلاف نہیں ہوں،عمران خان
  • بریکنگ :- لاہور:وزیراعظم بھکاریوں کی طرح پھرتا ہے،عمران خان
  • بریکنگ :- ان حکمرانوں کی جائیدادیں بیرون ملک ہیں،عمران خان
  • بریکنگ :- اینٹی امریکن نہیں ہوں،کسی کی غلامی نہیں چاہتا،عمران خان
  • بریکنگ :- امریکا میں سب سے طاقتورپاکستانی کمیونٹی ہے،عمران خان
  • بریکنگ :- امریکا سےدوستی کررہاتھا لیکن غلامی کےلیےتیارنہیں تھا،عمران خان
  • بریکنگ :- ڈونلڈ ٹرمپ سے میرے تعلقات اچھے تھے،عمران خان
  • بریکنگ :- ہماری سب سےزیادہ ایکسپورٹ امریکا سے ہے،عمران خان
  • بریکنگ :- امریکا سے دوستی چاہتا ہوں لیکن غلامی نہیں،عمران خان
  • بریکنگ :- ٹرمپ نے مجھے سب سے زیادہ پروٹوکول دیا تھا،عمران خان
  • بریکنگ :- امریکانےجنرل مشرف کوجنگ میں شرکت کیلئےدھمکی دی تھی،عمران خان
  • بریکنگ :- امریکا،یورپ کوجانتاہوں ان کےپاؤں میں گریں گےتوہمیں استعمال کریں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- ان کی چمچہ گیری کریں گےتووہ ہماری عزت نہیں کریں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- بدقسمتی سےجنرل مشرف نےاس وقت گھٹنےٹیک دیئے،عمران خان
  • بریکنگ :- جنگ میں شرکت پرپاکستانی قوم نےبھاری قیمت ادا کی،عمران خان
  • بریکنگ :- ملکی مفادکیلئےکھڑےہوں توان کواچھانہیں لگےگالیکن عزت کریں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- ہم امریکا کے اتحادی تھےاورامریکا نے 400 ڈرون حملےکیے،عمران خان
  • بریکنگ :- جب ڈرون حملے ہوتے تھے توہمارے حکمران چھپےبیٹھےتھے،عمران خان

پاکستان اپنی صلاحیت کا صرف 50 فیصد ٹیکس وصول کرتا ہے، ورلڈ بینک

Last Updated On 25 November,2019 03:54 pm

لاہور: (دنیا نیوز) ورلڈ بینک نے کہا ہے کہ پاکستان اپنی صلاحیت کا صرف 50 فیصد ٹیکس وصول کرتا ہے، جہاں کاروباری طبقہ ٹیکس نہ دے وہاں حکومتیں کام نہیں کرسکتیں، پاکستان کے بیشتر ریٹیلرز ٹیکس نہیں دیتے۔

ورلڈ بینک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کا ٹیکس نظام سہل نہیں ہے، خدمات فراہم کرنے والی کمپنیوں کو سال میں 60 ٹیکس ریٹرن جمع کرانے پڑتے ہیں، مختلف مصنوعات پر 26 قسم کے مختلف ٹیکس عائد ہیں جبکہ کمپنیاں صوبے کو الگ اور وفاق کو الگ جواب دہ ہیں، دوسری جانب حکومت نے زراعت، تعمیرات اور ٹیکسٹائل کے شعبے کو کافی مراعات دے رکھی ہیں۔ ورلڈ بینک کا کہنا ہے کہ ٹیکس نظام آسان بنانے کے لئے صوبوں اور وفاق کو مل کر کام کرنا ہوگا۔

تجزیہ کاروں کے مطابق جہاں حکومت عوام کو ٹیکس نظام میں شامل کرنے کے لئے ایڑھی چوٹی کا ضرور لگا رہی ہے وہیں ایف بی آر کو بھی ہاتھ پیر چلا نے کی ضرورت ہے۔