تازہ ترین
  • بریکنگ :- لاہورہائیکورٹ نےتحریری فیصلہ جاری کردیا
  • بریکنگ :- گورنرپنجاب یکم جولائی شام 4 بجےاجلاس بلائیں گے،فیصلہ
  • بریکنگ :- اجلاس میں دوبارہ گنتی ہوگی،لاہورہائیکورٹ کافیصلہ
  • بریکنگ :- تمام ادارےعدالتی احکامات کی پاسداری کرائیں گے،فیصلہ
  • بریکنگ :- وزیراعلیٰ کےانتخاب کاعمل مکمل کیےبغیراجلاس ملتوی نہیں ہوگا،فیصلہ
  • بریکنگ :- گورنرآرٹیکل 130 کی شق 5 کےتحت اپنےفرائض سرانجام دیں گے،فیصلہ
  • بریکنگ :- گورنرپنجاب نومنتخب وزیراعلیٰ سےحلف لیں گے،فیصلہ
  • بریکنگ :- گورنرانتخابی عمل سےاگلےروز 11 بجےتک حلف لینےکےپابندہوں گے،فیصلہ
  • بریکنگ :- گورنرپنجاب الیکشن کنڈکٹ سےمتعلق اپنی رائےنہیں دیں گے،فیصلہ

بھارت میں کورونا کا طوفان، ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کا انعقاد خطرے میں پڑ گیا

Published On 22 April,2021 04:25 pm

لاہور: (دنیا نیوز) بھارت بھر میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد میں طوفان جیسی تیزی کے باعث ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کا انعقاد خطرے میں پڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں کورونا وائرس کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، بڑھوتری کے باعث ملک کا نظام زندگی مفلوج ہو گیا، آکسیجن کی قلت پڑ گئی ہے، جبکہ وزیراعظم نریندرا مودی کی طرف سے عوام سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ احتیاط کریں بصورت دیگر لاک ڈاؤن لگانے کے راستے پر جانا ہو گا۔

بھارت میں کورونا وائرس کی کیسز کی تعداد میں بڑھنے کے بعد انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صورتحال کا بغور جائزہ لینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق آئی سی سی کے وفد کا 26 اپریل کا دورہ بھارت بھی خطرے میں پڑ گیا۔ آئی سی سی نے وفد کا موجودہ صورتحال میں بھارت جانا چیلنج قرار دیدیا ۔

آئی سی سی کے مطابق ٹیموں اور براڈ کاسٹرز، صحافیوں صحت اور حفاظت کو خطرے میں نہیں ڈالا جا سکتا ۔ آئی سی سی کے لیے ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کا انعقاد ایک بہت بڑا چیلنج بن گیا۔

آئی سی سی وفد نے ورلڈ کپ کے لیے بھارت کے 9 مجوزہ وینیوز کا بھی جائزہ لینا ہے، آئی سی سی جائزہ لینے کے بعد وینیوز کا حتمی فیصلہ کرے گا۔

یاد رہے کہ آئی سی سی ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ اکتوبر، نومبر میں بھارت میں کھیلا جانا ہے۔ احمد آباد کو ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ فائنل کی میزبانی کیلئے تجویز کیا گیا ہے۔ بنگلور، چنئی، دہلی، دھرم شالا، حیدر آباد، کولکتہ میزبان شہروں کی تجاویز میں شامل ہے، ممبئی اور لکھنو شہر بھی ورلڈ کپ مقابلوں کی میزبانوں کی ابتدائی فہرست میں شامل ہیں۔