تازہ ترین
  • بریکنگ :- کسی بھی قسم کےتشددکی اجازت نہیں دی جائیگی،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بلوچستان میں تخریبی کارروائیوں کےپیچھےسازش ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- دہشتگردی کوجڑسےاکھاڑدیں گے،وزیراطلاعات فوادچودھری
  • بریکنگ :- جہلم:ملکی معیشت درست سمت میں گامزن ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- جہلم:ہمیں دیوالیہ معیشت ملی تھی،وزیراطلاعات فوادچودھری
  • بریکنگ :- نوازشریف اینڈکمپنی نےملکی معیشت کابیڑاغرق کیا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- نوازشریف اینڈکمپنی کاکیاگیاکباڑذہنوں سےنہیں نکل سکتا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- تمام سیاسی جماعتیں عمران خان کےآگےڈھیرہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- یہ ملک مریم اوربلاول کےحوالےنہیں کیاجاسکتا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن جماعتوں کی پارلیمان کےاندراورباہرکوئی قدرنہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بلاول اورمریم کوچاہیےنچلی سطح سےاوپرآنےکی کوشش کریں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ان کاانحصارفضل الرحمان کےمدرسوں کےبچوں پرہے،فوادچودھری

'عوام نے 'روڈز بلاک' پلان بھی مسترد کر دیا،مولانا کو پلان 'ایگزٹ' کا سہارا لینا پڑا'

Last Updated On 20 November,2019 11:34 am

اسلام آباد: (دنیا نیوز) فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ 'روڈز بلاک' پلان بھی عوام نے مسترد کر دیا، قوم نے مولانا فضل الرحمن کے سارے پلان چوپٹ کر دئیے جس پر مولانا کو پلان 'ایگزٹ' کا سہارا لینا پڑا۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاش اعوان نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ مولانا جمہوریت کے راستے میں انا کی رکاوٹیں کھڑی کر کے اپنا سیاسی مستقبل خراب نہ کریں، حلقے میں جائیں، سیاسی طور پر ہلکے نہ ہوں، مولانا لشکر کشی اور غیر جمہوری ہتھکنڈوں میں ناکامی کے بعد اپنی خفت مٹانے کی کوشش کر رہے ہیں، آپ جس طرح خالی ہاتھ اسلام آباد آئے تھے، ویسے ہی خالی ہاتھ واپس لوٹ گئے۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا مولانا کی کی سیاسی جڑیں عوام نے کاٹیں لیکن آپ جمہوریت سے بدلہ لینے پر تل گئے، قوم نے دیکھ لیا کہ کون اسلام آباد سے چلتا بنا، ‏عوام نے آپ کو مسترد کر کے ثابت کیا کہ وہ انتہا پسندی کے ساتھ نہیں، ‏ہم نے تحمل اور بردباری کا مظاہرہ کرتے ہوئے جمہوری طرز عمل اختیار کیا، آپ کے احتجاج کے حق کو تسلیم کیا۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات کا کہنا تھا عمران خان کے دھرنے کے خلاف آپ کی نفرت انگیزی اور دھمکیاں تاریخ کا حصہ ہیں، یہ وہی پارلیمان ہے جس میں آپ کے فرزند آپ کی کرسی پر بیٹھے ہیں، ان کی تنخواہ اور مراعات حلال اور جائز ہیں ؟۔