تازہ ترین
  • بریکنگ :- وفاقی وزیرعلی زیدی کی ایم کیوایم کارکنوں پرتشددکی مذمت
  • بریکنگ :- خواتین اور ارکان اسمبلی پرڈنڈے برسائے گئے،علی زیدی
  • بریکنگ :- سندھ حکومت کی مظاہرین پرپولیس گردی شرمناک ہے،علی زیدی
  • بریکنگ :- سندھ میں جنگل کاقانون ہے،عوام کےساتھ نارواسلوک کیاجارہاہے،علی زیدی
  • بریکنگ :- جمہوریت کےلبادےمیں پیپلزپارٹی کاآمرانہ طرزحکومت قابل مذمت ہے،اسدعمر
  • بریکنگ :- دستورپاکستان شہریوں کوپرامن احتجاج کاحق دیتا ہے،اسدعمر
  • بریکنگ :- سندھ میں جماعتی راج کےبجائےپیپلزپارٹی آئینی حقوق کااحترام کرے،اسدعمر
  • بریکنگ :- پولیس کو سندھ سے جرائم کے خاتمےکیلئےاستعمال کیا جائے،اسدعمر

خواتین میں مردوں کی نسبت کورونا کی علامات زیادہ ظاہر ہوئیں: سروے

Last Updated On 15 June,2020 11:26 am

اسلام آباد: (روز نامہ دنیا) معروف ادارے گیلپ نے پاکستان میں کورونا وائرس کی صورتحال پر تازہ ترین سروے کے نتائج جاری کر د ئیے ہیں۔

گیلپ کے تازہ ترین سروے کے مطابق مئی 2020 میں 12 فیصد پاکستانیوں کو بخار کی شکایت ہوئی جبکہ 4 فیصد پاکستانیوں کو خشک کھانسی اور ایک فیصد کو سانس لینے میں دشواری محسوس ہوئی۔ پاکستان میں کورونا وائرس کی صورتحال پر گیلپ کے سروے کے مطابق مئی میں 78 فیصد پاکستانیوں کو کورونا وائرس کی کوئی بھی تکلیف محسوس نہیں ہوئی۔

گیلپ پاکستان کے سروے کے مطابق 19 فیصد خواتین اور 6 فیصد مردوں کو بخار اور کورونا وائرس کی دیگر علامات ظاہر ہوئیں، خواتین میں مردوں کی نسبت کورونا وائرس کی علامات زیادہ ظاہر ہوئی ہیں، دوسری جانب پاکستان کے دیہات میں 14 فیصد جبکہ شہروں میں 7 فیصد لوگوں کو بخار ہوا۔