تازہ ترین
  • بریکنگ :- اب ن لیگ کےمعافی مانگنےکاوقت ہواچاہتاہے،شہبازگل
  • بریکنگ :- ن لیگ 4 ماہ سےکہہ رہی ہےکہ ان کی ڈیل ہوگئی،شہبازگل
  • بریکنگ :- یہ سب کوخودٹیلیفون کرکےبتاتےہیں کہ بات بن گئی ہے،شہبازگل
  • بریکنگ :- اپوزیشن کی کاوشیں اپنےہی دام میں صیادآگیاکےمصداق ہیں،شہبازگل
  • بریکنگ :- ہمارےانکشاف سےان کی چیخ وپکارشروع ہوگئی،شہبازگل
  • بریکنگ :- پہلی ڈیل شریف فیملی نےضیاالحق،دوسری جونیجوکیساتھ کی،شہبازگل
  • بریکنگ :- نوازشریف نےپرویز مشرف کےساتھ بھی ڈیل کی،شہبازگل
  • بریکنگ :- ن لیگ نےڈیل کرکےپارٹی کی سینئرقیادت کی پیٹھ میں چھراگھونپا،شہبازگل
  • بریکنگ :- ڈیل کےبعدساری شریف فیملی منظرعام سےغائب ہوگئی،شہبازگل
  • بریکنگ :- پہلےڈیل سےانکارکرتےرہےپھرکہا 10 کےبجائے 5 سال کی ڈیل ہے،شہبازگل
  • بریکنگ :- مقصودچپڑاسی شریف فیملی کا 9 ہزارروپےپرملازم ہے،شہبازگل
  • بریکنگ :- مقصودچپڑاسی کےاکاؤنٹ میں 3700 کروڑکس نےڈالے؟ شہبازگل
  • بریکنگ :- تمام ملازمین کےاکاؤنٹس میں کل 16 ارب روپےآئے،شہبازگل
  • بریکنگ :- اسلام آباد:شریفوں کوبتاناچاہیےکہ ڈیل کس سےہوئی،شہبازگل
  • بریکنگ :- شریفوں کی ڈاکٹرائن اقتدارمیں آنا،مال بنانا،ڈیل کرنااوربھاگ جاناہے،شہبازگل
  • بریکنگ :- شریف فیملی پہلےگالیاں دیتی ہےپھرپاؤں پڑجاتی ہے،شہبازگل
  • بریکنگ :- شریف فیملی کو 16 ارب روپےکاجواب دیناپڑےگا،شہبازگل
  • بریکنگ :- چاروں شریف ڈیل اورڈھیل دینےکےباوجودنہیں بچ سکتے،شہبازگل

ملتان کے دو مختلف مقامات پر سیوریج پانی میں پولیو وائرس کا انکشاف

Published On 25 October,2020 09:16 am

ملتان: (دنیا نیوز) ملتان میں دو مختلف مقامات پر سیوریج کے گندے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے، محکمہ صحت نے قطرے پلانے سے انکاری والدین کیخلاف مقدمات درج کرانے کی حکمت عملی تیار کر لی۔

ملتان میں گزشتہ پولیومہم کے دوران تیس ہزار بچے قطروں سے محروم رہے جن میں سے بیشتر کے والدین انکاری بھی تھے جبکہ موجودہ صورتحال میں علی ٹاون اور سورج میانی سیوریج کے پانی میں پولیو وائرس کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے جس سے پولیو پھیلنے کا خطرہ مزید بڑھ گیا ہے، محکمہ صحت نے 26 اکتوبر کی مہم کے دوران پہلے مرحلے میں انکاری والدین کو قائل کرنے اور دوسرے مرحلے میں مقدمات درج کرانے کی حکمت عملی تیار کر لی ہے۔

محکمہ صحت نے گزشتہ مہم میں تین انکاری والدین کیخلاف مقدمات بھی درج کرائے تاہم انکارری والدین کے رویے پر مہم کی کامیابی کیلئے ذمہ داری کا مظاہرہ کرنے والے والدین کو بھی تحفظات ہیں۔

رواں سال جنوبی پنجاب کے مختلف اضلاع سے تین پولیو کیس سامنے آئے ہیں اسی لیے مہم کے دوران ناقص کارکردگی پر پولیو ورکروں کیخلاف بھی محکمانہ کاروائیوں کا فیصلہ کیا گیا ہے۔