تازہ ترین
  • بریکنگ :- صدارتی ریفرنس پر سپریم کورٹ کی تحریری رائے جاری
  • بریکنگ :- سپریم کورٹ کی تحریری رائے 8 صفحات پرمشتمل ہے
  • بریکنگ :- اسلام آباد:رائے تین ،دو کےتناسب سے دی گئی
  • بریکنگ :- جسٹس مندوخیل اورجسٹس مظہرعالم نے اختلاف کیا
  • بریکنگ :- صدارتی ریفرنس اکثریتی رائےسےنمٹایاگیا،سپریم کورٹ
  • بریکنگ :- منحرف ارکان تاحیات نااہلی سے بچ گئے
  • بریکنگ :- منحرف ارکان کی تاحیات نااہلی پرپارلیمنٹ قانون سازی کرے، تحریری رائے
  • بریکنگ :- اس حوالےسےقوانین کوآئین میں شامل کرنےکامناسب وقت ہے،تحریری رائے
  • بریکنگ :- پارلیمنٹ مسئلے کے حل کیلئے قانون سازی کرے، تحریری رائے
  • بریکنگ :- آرٹیکل 63اےسیاسی جماعتوں کوتحفظ فراہم کرتاہے، اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- سیاسی جماعتوں کوغیرمستحکم کرناان کی بنیادوں کوہلانےکےمترادف ہے، اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- منحرف ارکان کےذریعےہی سیاسی جماعتوں کوغیرمستحکم کیاجاتاہے،اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- کسی رکن کومنحرف ہونےسےروکنےکیلئےموثراقدامات کی ضرورت ہے، اکثریتی رائے
  • بریکنگ :- منحرف ارکان کی تاحیات نااہلی کےمعاملےپرقانون سازی کی جائے،سپریم کورٹ
  • بریکنگ :- کسی منحرف رکن کاپارٹی پالیسی کےخلاف ووٹ شمارنہیں ہوگا،سپریم کورٹ
  • بریکنگ :- پارٹی پالیسی کےخلاف جانےوالےرکن کاووٹ مستردتصورہوگا،سپریم کورٹ

پی ٹی آئی جیسی نالائق جماعت سے پیپلز پارٹی کا موازنہ، نہ کیا جائے، سعید غنی

Published On 02 April,2021 06:08 pm

کراچی: (دنیا نیوز) صوبائی وزیر تعلیم سعید غنی نے تحریک انصاف کو نالائق جماعت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کا اس سے کسی قسم کا موازنہ نہ کیا جائے۔

کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سعید غنی کا کہنا تھا کہ ہمیں پتا ہے کون سے کام خود کرنے ہیں، کن کاموں کے لئے قیادت کی منظوری ضروری ہے۔ ہم صوبے کی ترقی کے لئے سب سے مل کر کام کرنا چاہتے ہیں۔

سعید غنی نے وفاقی حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ پہلے گیس کی قیمتیں بڑھائی گئیں، شور مچا تو تحقیقاتی کمیٹی بنا دی حالانکہ منظوری خود دی تھی۔ دواؤں کی قیمتیں بھی خود بڑھائی لیکن وزیر کو فارغ کر دیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈالر کی قیمتیں بھی حکومت نے خود بڑھائیں۔ اسد عمر خود اعتراف کرچکے کہ انھیں، گورنر سٹیٹ بینک اور وزیراعظم کو اس فیصلے کا پتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ کامرس کے وزیر عمران خان خود ہیں، ان کی مرضی سے ہی ای سی سی کی سمری آئی، معاملہ کابینہ میں آتا ہے تو پوچھتے ہیں یہ کس نے کیا؟

صوبائی وزیر نے کہا کہ اس میں عمران خان کا قصور نہیں، بحیثیت وزیر منظوری دیتے ہیں لیکن بحیثیت وزیراعظم اعتراض کرتے ہیں۔ اگر حماد اظہر نے بغیر پوچھے سمری دی ہے تو اس کو برطرف کریں نہیں تو جس نے منظوری دی اس کو سامنے لائیں۔