تازہ ترین
  • بریکنگ :- راناتنویرکی صدارت میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کااجلاس
  • بریکنگ :- پی اےسی اجلاس میں نیب آڈٹ کےاعتراضات کاجائزہ
  • بریکنگ :- ڈی جی نیب کی پی اےسی کونیب کی کارکردگی پربریفنگ
  • بریکنگ :- نیب نےاکتوبر 2021 تک 821 ارب 57 کروڑریکورکیے،ڈی جی نیب
  • بریکنگ :- نیب نے 500 ارب سےزائدکی ان ڈائریکٹ ریکوری کی،ڈی جی نیب
  • بریکنگ :- ریکوری کیش،زمین،ہاؤسنگ سوسائٹیز،کورٹ کیسزسےکی گئی،بریفنگ
  • بریکنگ :- ہمیں ان کیسز کی مکمل تفصیلات بتائی جائیں،ایازصادق
  • بریکنگ :- بک انٹری سمیت ایک ایک چیز کی تفصیل چاہیے،چیئرمین پی اےسی
  • بریکنگ :- سب سےزیادہ ریکوریاں راولپنڈی سے 294 ارب کی گئیں،ڈی جی نیب
  • بریکنگ :- سب سےکم ریکوریاں بلوچستان سے 51 کروڑکی کیں،نیب حکام
  • بریکنگ :- لاہور 84 ارب 17 کروڑ،کراچی سے 88 ارب 28 کروڑریکور،ڈی جی نیب
  • بریکنگ :- خیبرپختونخوا 3 ارب 43 کروڑ،ملتان سے 4 ارب 37 کروڑروپےریکور،نیب
  • بریکنگ :- 2020 میں سب سےزیادہ 313 ارب روپےریکورکیے،نیب حکام
  • بریکنگ :- 2021 میں 26 ارب روپےریکورکیے،نیب حکام کی بریفنگ

'شہباز شریف کے پاس پارٹی کا کنٹرول نہیں ،سندھ میں جمہوریت کے نام پر آمریت ہے'

Published On 20 June,2021 02:18 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات چوہدری فواد نے کہا ہے کہ شہباز شریف کے پاس ن لیگ کا کنٹرول نہیں، انہیں فیصلے کیلئے کسی کا کندھا چاہیے۔ سندھ میں جمہوریت کے نام پر آمریت ہے، فضل الرحمان چاہتے ہیں سسٹم نہ چلے، اپوزیشن عمران خان کو نہیں ہراسکتی۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کراچی پریس کلب میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں آرئیکل 140 اے کا عملدرآمد کرانا لازم ہو گیا ہے، جو پیسہ بھی سندھ کے حوالے کیا، وہ دبئی سے برآمد ہوتا ہے، کبھی لانچوں کے ذریعے تو کبھی جعلی اکاؤنٹس سے پیسہ باہر بھیجا گیا۔

انہوں نے کہا کہ سندھ میں اگلی حکومت پی ٹی آئی کی ہو گی، انتخابی اصلاحات پر پارلیمنٹ سے ہٹ کر گفتگو نہیں ہو سکتی، ن لیگ کا کنٹرول شہباز شریف کے پاس نہیں ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان ملک میں شفاف الیکشن کے لئے اصلاحات کرناچاہتے ہیں، وہ کرکٹ میں بھی نیوٹرل ایمپائر لے کر آئے تھے۔ اپوزیشن والے ایک طرف تو ووٹ کو عزت دینے کی بات کرتے ہیں تو دوسری طرف ووٹرز کو ٹھوکریں مارتے ہیں، اپوزیشن بھی انتخابی اصلاحات سے متعلق تجاویز دے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اپوزیشن کے پاس کوئی ایجنڈا نہیں، سندھ کےسب سے بڑے دشمن سندھ پر راج کر رہے ہیں، یہ ضروری ہے کہ جو پیسہ سندھ کو دیں اس کی مانیٹرنگ کی جائے۔ پانی خود چوری کر رہے ہیں، الزام وفاق، پنجاب پر لگایا جا رہا ہے۔ ارسا نےعملی اقدام شروع کیے تو مراد علی شاہ جوتے چھوڑ کر بھاگ گئے۔ فواد چوہدری نے سوال اٹھایا کہ زرداری، فریال تالپور، مرادعلی شاہ کی زمینوں کا پانی چوری کیوں نہیں ہوتا۔