تازہ ترین
  • بریکنگ :- این اے245کراچی شرقی میں ضمنی الیکشن
  • بریکنگ :- کراچی:جےیوآئی کااپناامیدوارایم کیوایم کےحق میں دستبردارکرانےکافیصلہ
  • بریکنگ :- جےیوآئی کےامین اللہ ایم کیوایم کےمعیدانورکےحق میں دستبردارہوں گے
  • بریکنگ :- کراچی:این اے245کی نشست عامرلیاقت کےانتقال کےبعدخالی ہوئی تھی
  • بریکنگ :- کراچی:این اے245کی نشست پرضمنی الیکشن 21اگست کوشیڈول ہے
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی نےاین اے245پرپہلےہی اپناامیدوارایم کیوایم کےحق میں دستبردار کرادیاہے

پنجاب میں آئینی بحران جاری، صوبہ گورنر سے محروم، کابینہ کی تشکیل بھی لٹک گئی

Published On 11 May,2022 11:30 am

لاہور: (دنیا نیوز) پنجاب میں آئینی بحران جاری ہے، صوبہ تاحال گورنر سے محروم ہے۔ سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی نے عہدے کا چارج نہ سنبھالا۔ پنجاب کابینہ تشکیل دی جا سکی نہ ہی ایڈوکیٹ جنرل کی برطرفی کا معاملہ منطقی انجام تک پہنچ سکا۔

پنجاب میں گورنر کی تعیناتی اور چارج لینے کے معاملے پر آئینی بحران شدت اختیار کر گیا، سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے ابھی تک گورنر کے عہدے کا چارج نہیں لیا جس کی وجہ سے گورنر کا آئینی عہدہ خالی ہے۔ گورنر ہاوس کے باہر دوسرے روز بھی پولیس کا پہرہ ہے. گورنر ہاوس کے مرکزی گیٹ کے سامنے رکاوٹیں کھڑی ہیں جبکہ عمر سرفراز چیمہ کے گورنر ہاوس داخلے پر پابندی عائد ہے۔

نئے گورنر کی تعیناتی کے لئے مسلم لیگ ن کے رہنما بلیغ الرحمن کی سمری ایوان صدر میں موجود ہے جس پر صدرمملکت کی جانب سے کوئی اقدام نہیں اٹھا یا جا رہا، گورنر نہ ہونے سے پنجاب کابینہ بھی تشکیل نہ دی جا سکی، ایڈوکیٹ جنرل پنجاب کی برطرفی کامعاملہ بھی گورنر نہ ہونے کی وجہ سے التوا کاشکار ہے۔