9 مئی واقعات: آئی ایم ایف بھی سیاسی صورتحال دیکھ رہا ہے: اسحاق ڈار

Published On 31 May,2023 09:12 pm

لاہور: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کے ساتھ خلوص نیت سے مذاکرات کیے تھے، پورے ملک میں ایک وقت میں الیکشن کا مطالبہ پی ٹی آئی نے مان لیا تھا، اگر چیئرمین پی ٹی آئی قوم سے معافی مانگیں تو ڈائیلاگ ہو سکتے ہیں، ڈائیلاگ کیلئے نواز شریف کو بھی منانا پڑے گا، نواز شریف نے کہا جلاؤ گھیراؤ کرنے والوں سے ڈائیلاگ نہیں ہو سکتے۔

دنیا نیوز کے پروگرام "آن دی فرنٹ" میں گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ نو مئی کے حوالے سے تحقیقات ہو رہی ہیں، عالمی مالیاتی ادارے بھی پاکستانی سیاست پر نظر رکھے ہوئے ہیں، آئی ایم ایف بھی صورتحال کو دیکھ رہا ہے اور سوال کر رہا ہے استحکام کب آئے گا، نو مئی واقعات کے حوالے سے سینئر لیڈر شپ کیخلاف کافی شواہد موجود ہیں، پلاننگ تھی اگر انہیں گرفتار کیا جائے گا تو ایسا کرنا ہے۔

وزیر خزانہ نے مزید کہا ہے کہ ان کی پلاننگ تھی کہاں کہاں جانا ہے، یہ تو انتہا پر چلے گئے، کارکنوں نے لیڈر کی ہدایات پرعمل کیا، ایبسلوٹلی ناٹ کہنے والوں کے اب منت ترلے ہو رہے ہیں، نو مئی کیس میں ایک مثال قائم ہونی چاہیے، دشمن تو چاہتا ہے ملک میں افراتفری پھیلے، ہر روز ڈیفالٹ، ڈیفالٹ کی باتیں کی جاتی ہیں، ڈپلومیٹک کو وزارت خارجہ ملٹری کورٹ کے حوالے سے بریف کرے گی۔

انہوں نے کہا ہے کہ کسی نے فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا ہے تو اس کا آرمی ایکٹ کے تحت ٹرائل ہو گا، شواہد کی بنیاد پر 90 فیصد چانس ہے عمران خان نے خود پلان کیا، کسی سینئر ممبر کو الہام تو نہیں ہونا تھا فلاں جگہ حملہ کریں، ثابت ہو جاتا ہے تو کسی کو بھی قانون سے بالاتر نہیں ہونا چاہیے، پی ٹی آئی کو توڑنے کے حوالے سے غلط تاثر دیا جا رہا ہے، یہ جس طرح پارٹی بنی اب مکافات عمل کا شکار ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ نیشنل سکیورٹی کمیٹی میں ایک اصول طے ہوا ہے، جو بے گناہ ہو گا اس کو ہاتھ نہیں لگایا جائے گا جو ملوث ہے اسے چھوڑا نہیں جائے گا، یہ سیاسی جماعت نہیں فتنہ اور فاشزم ہے، حکومت کے پاس انٹیلی جنس رپورٹ تھی کہ یہ لوگ تربیت یافتہ ہیں، یہ بھی رپورٹ تھی جب بھی عمران خان کو گرفتار کیا جائے گا تو انہوں نے حملہ کرنا ہے، عمران خان کی ملک کے حوالے سے کوئی خدمات نہیں۔

وزیر خزانہ نے کہا ہے کہ قانون سب کیلئے برابر ہونا چاہیے اگر نواز شریف کی بیٹی کو گرفتار کیا جا سکتا ہے تو کسی کی اہلیہ آسمان سے تو نہیں اتری، عمران خان دور میں تو فاشزم کا ایک اڈہ بنا دیا گیا تھا، پی ٹی آئی خواتین کے ساتھ اگر زیادتی ہو گی تو سب سے پہلے آواز اٹھاؤں گا، نو مئی واقعات میں چاہے خواتین ہوں کسی کو رعایت نہیں مل سکتی۔

انہوں نے مزید کہا کہ جب پاکستان واپس آ رہا تھا تو جہاز میں تھا اور ڈالر 5 روپے نیچے آگیا، ڈالر کے حوالے سے کچھ کردار ہیں وقت آنے پر ضرور شیئر کروں گا، ابھی ان کرداروں بارے بتانا ملک کیلئے مناسب نہیں ہو گا، جنوری، دسمبر تک ڈالر 235 تک تھا، ہمسایہ ملکوں میں پہلے گندم، کھاد اور اب ڈالر بھی سمگل ہوتا ہے، بدقسمتی سے ایران، افغانستان میں ڈالر سمگل ہوتا ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کی تمام شرائط پوری کر دی ہیں، 30 جون تک آئی ایم ایف پروگرام ویسے ہی ختم ہو جانا ہے، اب تو اگلا ریویو ہونا ہی نہیں، آئی ایم ایف سے نواں ریویو ہی ہو سکے گا، میں نے کہا نویں ریویو کے بغیر بجٹ شیئر نہیں کر سکتا، اکانومی کو بٹن آن آف کر کے ٹھیک نہیں کیا جا سکتا، اکانومی کو ٹھیک کرنےمیں وقت لگے گا۔

وفاقی وزیر خزانہ نے مزید کہا ہے کہ بجٹ میں پورے ملک کے الیکشن کیلئے 42 بلین رکھ دیئے ہیں، بجٹ میں عوام پر کوئی بوجھ نہیں ڈالا جائے گا، تنخواہ دار طبقے کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے کی کوشش کریں گے، پارٹی جب کہے گی نواز شریف واپس آئیں گے، نواز شریف کی صحت کا معاملہ بھی ہے، ہمارے اپنے امیدوار ہیں تحریک انصاف والوں کو کیسے پارٹی میں شامل کر سکتے ہیں۔
 

Advertisement