جماعت اسلامی کا مہنگائی کیخلاف گورنر ہاؤس کے سامنے دھرنے کا دوسرا روز

Published On 22 September,2023 09:59 am

لاہور: (دنیا نیوز) ہوشربا مہنگائی کے خلاف جماعت اسلامی کی جانب سے گورنر ہاؤس کے سامنے آج دوسرے روز بھی دھرنا جاری رہے گا۔

دھرنے کے پہلے روز کارکنان کی بڑی تعداد نے شرکت کی، امیر جماعت اسلامی سراج الحق، امیر العظیم، لیاقت بلوچ نے احتجاجی مظاہرین سے خطاب کیا۔

امیر جماعت اسلامی کا خطاب کے دوران کہنا تھا کہ حکمرانوں نے ملک اور عوام کو یرغمال بنا لیا، عوام کے ٹیکس پر پلنے والے حکومت جانے کے بعد لندن جا کر بیٹھ جاتے ہیں، مہنگائی کے خاتمے کیلئے ہماری جدوجہد جاری رہے گی، اگلے لائحہ عمل کا اعلان دھرنے کے تیسرے روز ہوگا۔

رہنما جماعت اسلامی امیر العظیم اور لیاقت بلوچ نے کہا کہ بجلی، گیس کی قیمتوں اور آئی ایم ایف کے غلط معاہدوں نے ملک کو تباہ کر دیا، ملکی مسائل کا حل شفاف الیکشن ہیں، واپڈا سستی بجلی دیتا تھا اس سے اختیارات لے کر آئی پی پیز کو لایا گیا۔

بعدازاں سماجی رابطے کی ویب سائٹ ایکس پر ایک پیغام میں سراج الحق کا کہنا تھا کہ حکمرانوں نے آئی ایم ایف کے کہنے پر عوام کو قربانی کا بکرا بنایا، خون غریب کا نچوڑا جا رہا ہے جبکہ قرضے ہڑپ کرنے اور کرپشن کمیشن والی اشرافیہ مزے میں ہے۔

انہوں نے مزید لکھا کہ ظلم کا یہ نظام مزید نہیں چل سکتا، بجلی کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیا جائے، پٹرول، گیس کے نرخ کم کئے جائیں، اشیائے خورونوش عوام کی پہنچ تک لائی جائیں، آئی ایم ایف اور آئی پی پیز معاہدوں کی تفصیلات قوم کے سامنے رکھی جائیں۔
 

Advertisement