تازہ ترین
  • بریکنگ :- جوافسران بھی سیاسی کرداراداکریں گےانہیں نتائج کاسامناکرناپڑےگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی کارکنوں کےخلاف مختلف شہروں میں آپریشن شروع ہوگیا،فواد چودھری
  • بریکنگ :- ظلم کایہ دورختم ہونےکوہےڈٹےرہو،فوادچودھری
  • بریکنگ :- حکومت سیاسی خودکشی کررہی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماؤں کےگھروں پرچھاپوں اورگرفتاریوں کی مذمت کرتےہیں،شفقت محمود
  • بریکنگ :- موجودہ حکومت اپنااصلی رنگ دکھارہی ہے،رہنما پی ٹی آئی شفقت محمود
  • بریکنگ :- پارٹی رہنماؤں اورکارکنوں کےگھروں پرپولیس چھاپوں کی مذمت کرتےہیں،اعجازچودھری
  • بریکنگ :- چادراورچاردیواری کاتقدس پامال کیاجارہاہے،سینیٹراعجازچودھری
  • بریکنگ :- ریاستی غنڈہ گردی کاڈٹ کرمقابلہ کریں گے،سینیٹراعجازچودھری
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی رہنماؤں اورکارکنوں کےگھروں پرچھاپوں کی مذمت،حسان خاور
  • بریکنگ :- امپورٹڈحکومت ریاستی دہشت گردی پراترآئی،پی ٹی آئی رہنماحسان خاور
  • بریکنگ :- بیوروکریسی امپورٹڈحکومت ‬کےغیرآئینی احکامات تسلیم نہ کرے،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- پوری قوم آپ کودیکھ رہی ہے،حق اورسچ کاساتھ دیں،فرخ حبیب
  • بریکنگ :- فاشسٹ جماعتوں نےہمارےدورحکومت میں 4 لانگ مارچ کیے،عثمان بزدار
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی نےاپنی حکومت میں کسی کوجلسےجلوسوں سےنہیں روکا،عثمان بزدار
  • بریکنگ :- ‏جوبھی اہلکاریہ غیرقانونی کام کررہےہیں انہیں جلدحساب دیناپڑےگا،عثمان بزدار

قطر کا فلسطین کے عوام اور جدوجہد آزادی کی حمایت جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ

Published On 24 May,2021 06:45 pm

دوحہ: (ویب ڈیسک) قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد الثانی نے فلسطین کی مزاحمتی تنظیم حماس کے سربراہ اسماعیل ہانیہ سے ملاقات کی۔ دونوں رہنماؤں نے فلسطین کی موجودہ صورتحال اور محصور غزہ کی تعمیرِ نو پر بات چیت کی۔

امیرِ قطر کے صداراتی محل امیری دیوان سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اسماعیل ہانیہ نے فلسطین کی آزادی اور غزہ پر اسرائیلی جارحیت کے خاتمے کے لئے قطر کی سفارتی کوششوں پر شکریہ ادا کیا۔

امیرِ قطر نے برادر ملک فلسطین کے عوام اور ان کی جدوجہد آزادی کی حمایت جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

اسماعیل ہنیہ نے اسرائیلی حملوں سے غزہ میں ہونے والے نقصانات، شہری انفرااسٹرکچر اور رہائشی گھروں کی تعمیر نو کے لئے قطر سے امداد فراہم کرنے کا مطالبہ کیا۔

امیرِ قطر نے کہا کہ غزہ کے عوام کی مالی مدد جاری رکھی جائے گی تاکہ ان کے معمولات زندگی بحال ہو سکیں۔

واضح رہے کہ رمضان کی 27 ویں شب اسرائیل نے مسجد اقصیٰ پر حملہ کیا جس کے بعد دونوں طرف سے حملوں میں تیزی آئی۔ یہ جنگ 11 روز جاری رہی جس میں اسرائیلی میزائل اور بم حملوں سے 250 سے زائد فلسطینی شہید ہوئے اور غزہ کی بیشتر رہائشی عمارتیں تباہ ہو گئیں۔

فلسطینیوں میں اشتعال اس وقت پیدا ہوا جب اسرائیل کی ایک عدالت نے مشرقی یروشلم کی فسلطینی آبادی کے علاقے شیخ جراح سے فلسطینیوں کو بے دخل کرنے کا فیصلہ دیا جس کے بعد صورتحال کشیدہ ہو گئی۔