تازہ ترین
  • بریکنگ :- کالعدم تنظیم کااسلام آبادمیں ممکنہ احتجاج
  • بریکنگ :- اسلام آبادپولیس نے حکمت عملی تبدیل کرلی
  • بریکنگ :- مختلف مقامات بندکرنےکیلئے 100سےزائدکنٹینرزاسلام آبادپہنچ گئے
  • بریکنگ :- آئی جی اسلام آبادکی زیرصدارت اعلیٰ سطح اجلاس میں فیصلہ کیاگیا
  • بریکنگ :- اسلام آبادپولیس کامزید داخلی راستوں کوبندکرنےفیصلہ
  • بریکنگ :- کاک پل،کورال،کھنہ،ترامڑی چوک،بارہ کہو کوبندکرنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- اسلام آباد:زیروپوائنٹ اوردیگرمقامات کوبھی بندکرنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- ریڈزون،ڈپلومیٹک انکلیواورفیض آبادمیں 120سےزائدکنٹینرزلگائےگئےتھے

شرعی قانون کو برقرار رکھا جائے: ملا ہیبت اللہ کا نئی حکومت کو پہلا پیغام

Published On 07 September,2021 10:18 pm

کابل: (ویب ڈیسک) افغان طالبان کے امیر ملا ہیبت اللہ نے اپنی نئی حکومت کو پیغام دیا ہے کہ شرعی قانون کو برقرار رکھے۔

اے ایف پی کے مطابق ہیبت اللہ اخوندزادہ اس سے قبل عوام میں کہی بھی نظر نہیں آتے تھے یہ ان کا پہلا واضح پیغام ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق افغان طالبان کے سپریم کمانڈر نے نئی کابینہ کے اعلان کے بعد اپنے پہلے پیغام میں کہا ہے کہ میں ملک میں رہنے والوں کو یقین دلاتا ہوں کہ ملک کو اوپر لے جانے کے لیے سخت محنت کریں گے، اسلامی اصول اور شرعی قانون کو برقرار رکھا جائے گا۔

انہوں نے افغان عوام سے کہا کہ نئی قیادت پائیدار امن ، خوشحالی اور ترقی کو یقینی بنائے گی، لوگوں کو ملک چھوڑنے کی کوشش نہیں کرنی چاہیے۔ امارت اسلامی کو کسی کے ساتھ کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

ملا ہیبت اللہ کا کہنا تھا کہ افغانستان میں نظام اور ملک کو مضبوط بنانے میں سب حصہ لیں گے اور ہم اپنے جنگ زدہ ملک کو دوبارہ تعمیر کریں گے۔