تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم شہبازشریف کی صدارت میں سیاسی کمیٹی کااجلاس
  • بریکنگ :- اسلام آباد:عوام کاتحفظ یقینی بنایاجائےگا،اجلاس میں فیصلہ
  • بریکنگ :- ایسےہتھکنڈےمعیشت کوتباہ کرنےکےمترادف ہے،وزیراعظم
  • بریکنگ :- ایسےدھرنوں سےمعیشت خراب اورمزدورمتاثرہوگا،وزیراعظم
  • بریکنگ :- اجلاس میں ریاست کی رٹ پرکوئی سمجھوتہ نہ کرنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- ہرغیرقانونی کام کاراستہ روکاجائےگا،اجلاس میں فیصلہ
  • بریکنگ :- امن وامان میں خلل ڈالنےوالوں کیخلاف کارروائی ہوگی،فیصلہ
  • بریکنگ :- مفادعامہ کیلئےتمام راستےکھلےرکھےجائیں گے،فیصلہ
  • بریکنگ :- کسی قسم کےتشددیااشتعال انگیزی پرقانون حرکت میں آئےگا،فیصلہ
  • بریکنگ :- دھرنےسےمتعلق عدالتوں کےفیصلوں پرمن وعن عملدرآمدہوگا،فیصلہ

منجمد اثاثوں سے پابندی ہٹائیں: افغان وزیر خارجہ کا امریکا سے مطالبہ

Published On 09 October,2021 07:20 pm

دوحہ: (دنیا نیوز) امریکا اور افغان طالبان کے درمیان قطرکے دارالحکومت دوحہ میں مذاکرات کے دوران افغان وزیرخارجہ نے مطالبہ کیا ہے کہ امریکا افغان مرکزی بینک کے منجمد اثاثوں سے پابندی ہٹائے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکا اور افغان طالبان کے درمیان پہلی بار مذاکرات قطر کے دارالحکومت دوحہ میں شروع ہوگئے۔ مذاکرات دو روز جاری رہیں گے۔

اس حوالے سے افغان وزیرخارجہ امیر خان متقی کا کہنا تھاکہ امریکی وفد سے تعلقات کی نئی شروعات پر بات ہوئی ہے جبکہ افغان مرکزی بینک کے منجمد اثاثوں سے پابندی ہٹانےکا بھی کہا ہے۔ امریکی وفد سے انسانی امداد جاری رکھنے اور دوحہ معاہدےکی پاسدرای پر بات ہوئی جبکہ بات چیت میں افغانستان کی علاقائی سالمیت کا احترام کرنے پر زور دیا گیا۔

امیرخان متقی کا کہنا تھاکہ معاملات میں دخل اندازی نہ کرنے پر بھی بات ہوئی اور دونوں ممالک کے درمیان مثبت تعلقات اور روابط رکھنے پر تبادلہ خیال ہوا۔

خیال رہے کہ اس سے قبل امریکی وفد کا کہنا تھا کہ طالبان سے امریکی شہریوں کے افغانستان سے بحفاظت انخلا، ایک اغوا شدہ امریکی شہری کی بازیابی اور افغانستان میں انسانی حقوق پر بات کریں گے۔