تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 6357 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 13لاکھ 81 ہزار 152 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 82 ہزار 396 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 17 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 29 ہزار 122 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 556 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 12 لاکھ 69 ہزار 634 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 49 ہزار 595 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 2 کروڑ 46 لاکھ 39 ہزار 942 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 1200 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 66 ہزار 164،سندھ میں 5 لاکھ 29 ہزار 218 کیسز
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 85 ہزار 683،بلوچستان میں 33 ہزار 975 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آبادایک لاکھ 20 ہزار 128،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 510 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 35 ہزار 474 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 12.81 فیصدرہی،این سی اوسی

وزیراعظم عمران خان کا پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے کا فیصلہ

Published On 31 August,2020 04:31 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وزیراعظم عمران خان نے اوگرا کی سمری مسترد کرتے ہوئے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

وزیراعظم کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ پورے ملک میں بارشوں سے مشکل صورتحال کا سامنا ہے، موجودہ حالات میں عوام پر بوجھ نہیں ڈالا جا سکتا۔

خیال رہے کہ اوگرا نے پٹرول 9 روپے 71 پیسے مہنگا کرنے کی سمری بھجوائی تھی۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں یہ ردوبدل 15 روز کیلئے کیا جانا تھا۔

اوگرا کی جانب سے ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 9 روپے 50 پیسے اضافے کی سفارش کی تھی۔ اس کے علاوہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ 30 روپے فی لٹر پٹرولیم لیوی کی بنیاد پر تجویز کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ اس وقت عوام سے پٹرول پر 26 روپے 70 پیسے اور ڈیزل پر 25 روپے 73 پیسے فی لٹر پٹرولیم لیوی وصول کی جا رہی ہے۔

وزیراعظم آفس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے سے حکومت پر 17 ارب روپے کا بوجھ پڑے گا۔ عوام کو ریلیف دینے کے لئے حکومت یہ اضافی بوجھ خود برداشت کرے گی۔

ادھر حکومت نے پیٹرولیم لیوی میں ردوبدل کرتے ہوئے اس میں 5 روپے فی لیٹر کمی کر دی ہے۔ پیٹرول پر لیوی 26.70 روپے سے کم کرکے 21.70 روپے فی لیٹر مقرر کر دی گئی ہے۔

اس کے علاوہ ہائی سپیڈ ڈیزل پر پیٹرولیم لیوی میں 3 روپے 85 پیسے فی لیٹر کمی، ڈیزل پر پیٹرولیم لیوی 25.73 روپے سے کم کرکے 21.88 روپے فی لیٹر کر دی گئی ہے۔

لائٹ ڈیزل پر پیٹرولیم لیوی 3 روپے سے کم کرکے 2.41 روپے فی لیٹر جبکہ مٹی کے تیل پر پٹرولیم لیوی ایک روپے 23 پیسے فی لیٹر بڑھا دی گئی ہے۔

مٹی کے تیل پر لیوی 6 روپے سے بڑھا کر 7.23 روپے فی لیٹر کر دی گئی ہے۔ پیٹرولیم لیوی کی نئی شرح کا اطلاق یکم ستمبر سے ہوگا۔ پیٹرولیم ڈویژن نے پیٹرولیم لیوی کی شرح میں ردوبدل کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔