تازہ ترین
  • بریکنگ :- اسلام آباد:مقدمہ حکومت کی مدعیت میں درج کیاگیا
  • بریکنگ :- اسلام آباد:مقدمےمیں دہشتگردی،قتل،اقدام قتل کی دفعات شامل
  • بریکنگ :- ملزمان نےایک دم پولیس پرفائرنگ شروع کردی،مقدمےکامتن
  • بریکنگ :- فائرنگ سےہیڈکانسٹیبل منورشہید،راشداورراؤامین زخمی ہوگئے،مقدمہ
  • بریکنگ :- اسلام آباد:جوابی فائرنگ سےدونوں دہشتگردہلاک ہوگئے،مقدمےکامتن
  • بریکنگ :- کراچی کمپنی کےعلاقےمیں پولیس اہلکاروں پرفائرنگ کامقدمہ درج

پہلے دن سے پتا تھا کہ پیپلز پارٹی پارلیمنٹ سے باہر نہیں آئے گی، رانا ثناء اللہ

Published On 16 March,2021 10:46 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ کوئی دل شکستہ ماحول والی بات نہیں ہے، پہلے دن سے پتا تھا کہ پیپلز پارٹی پارلیمنٹ سے باہر نہیں آئے گی۔

یہ بات انہوں نے دنیا نیوز کے پروگرام ‘’دنیا کامران خان کیساتھ’’ گفتگو میں کہی۔ رانا ثناء اللہ خان پی ڈی ایم اجلاس کی روداد سناتے ہوئے کہا کہ آج کی میٹنگ میں 10 میں سے 9 پارٹیوں نے استعفوں پر اتفاق کیا لیکن پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہمیں عدم اعتماد کا آپشن استعمال کرنا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم میں بڑے اچھے ماحول میں بات چیت ہوئی۔ تمام پارٹیوں نے اپنا،اپنا موقف دیا لیکن پیپلز پارٹی کا پہلے دن سے ہی یہی موقف تھا۔ پیپلز پارٹی نے کہا ایک آپشن دیں معاملے کو سی ای سی میں لے جائیں۔

لیگی رہنما نے کہا کہ پیپلز پارٹی سمیت سب جماعتوں کا اتفاق ہے کہ حکومت کا خاتمہ ہونا چاہیے۔ آصف زرداری نے جیل بھرو تحریک کا حوالہ بھی دیا۔ تاہم مولانا فضل الرحمان کا موقف تھا کہ اسی لانگ مارچ کے ساتھ استعفے دینے چاہیں۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ استعفوں کے معاملے پر پیپلز پارٹی اپنا موقف واضح کرے گی۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے وقت مانگا ہے تو وہی سوالوں کے جواب دے گی۔

ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی اگر استعفوں کے معاملے پر ساتھ نہیں دیتی تو ہو سکتا ہے لانگ مارچ یا دھرنے میں ساتھ دے۔ عید سے پہلے یا عید کے بعد لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لانگ مارچ ملتوی کرنے کی ایک وجہ کورونا بھی ہے۔