تازہ ترین
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونا سےمزید2اموات،این آئی ایچ
  • بریکنگ :- 24گھنٹےکےدوران ملک بھرمیں کورونا کے 13ہزار759ٹیسٹ کیے گئے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24گھنٹےکےدوران 333کیسز رپورٹ،85کی حالت تشویشناک

ڈی جی آئی ایس پی آر نے جو کہا ان کی بات کی تائید کرتا ہوں: فواد چودھری

Published On 14 April,2022 05:37 pm

اسلام آباد:(دنیا نیوز) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ ڈی جی آئی ایس پی آر نے جو کہا ان کی اس بات کی تائید کرتا ہوں، ہم یہی تو کہہ رہے ہیں کمیشن دیکھے گا دھمکی دی گئی یا نہیں، میری نظر میں ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان نیشنل سکیورٹی کونسل کی پریس ریلیز کی ہی توثیق ہے۔

سوشل میڈیا پر اپنے بیان میں فواد چودھری نے کہا کہ سکیورٹی کونسل نے کہا کہ پاکستان کی سیاست میں بیرونی مداخلت کی مذمت کرتے ہیں، لفظ سازش استعمال نہیں ہوا، اب اہم ہے کہ جوڈیشل کمیشن بنے جو اس مداخلت کی تحقیقات کرے کہ یہ مداخلت کہاں سے ہوئی۔

قبل ازیں سابق وفاقی وزیر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کیا سازش کا معاملہ تھا، یہی تو ہم کہہ رہے ہیں کہ کمیشن بنے اسی میں سوالات سارے آئیں گے، ہم یہی تو کہہ رہے ہیں کمیشن دیکھے گا دھمکی دی گئی یا نہیں، چیف جسٹس جتنی جلدی ہو کمیشن بنا دیں، ججز کو سیاسی معاملات میں نہیں گھسیٹنا چاہیے، چیف جسٹس کے پاس خط ہے اب کمیشن بننا چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ فوج نے خود کہا سیاسی معاملات میں نہ گھسیٹا جائے، افواج پاکستان کے ساتھ ہمارا گہرا تعلق اور احترام ہے، جو لوگ فوج کے خلاف مہم چلاتے ہیں وہ پاکستانی نہیں ہوسکتے، ہمارا فوج کے لیے احترام برقرار ہے اور رہے گا۔

فواد چودھری کا کہنا تھا کہ حکومت خود الیکشن کا اعلان کر دے ورنہ آزادی چھین کر لیں گے، پاکستان میں حکومت کون بنائے گا یہ فیصلہ کسی بیرون ملک نے نہیں عوام کے ووٹ سے ہوگا، کل پشاور کا جلسہ تاریخی تھا، کل کے پی میں لاکھوں لوگوں نے وزیراعظم کو سنا، پی ٹی آئی پورے پاکستان کی آواز ہے، ہم آزادی چھین کر لیں گے، عمران خان بھی پاکستانی عوام کی آزادی چھین کر لے گا، ہمیں سلامتی کے بحران کا سامنا ہے جس کا واحد حل الیکشن ہے، وزیراعظم کراچی میں عظیم الشان جلسہ کریں گے۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ آج ہمارے استعفے منظور ہوگئے ہیں، میں تمام اراکین کو سلام پیش کرتا ہوں، ہم تمام اراکین جنہوں نے استعفیٰ دیا سلام پیش کرتے ہیں، جلد یہ لوگ دوبارہ آئیں گے، ن لیگ کے ساتھ کوئی بھی سیاسی جماعت آگے بڑھنے کو تیار نہیں، نااہل حکومت معیشت کو تباہ کر رہے ہیں، کوئی بھوکا نہ سوئے کا پروگرام بند کیا جارہا ہے، نور عالم گلے میں تختی پہن کر نکلا کریں جس پر لکھا ہو مجھے کوئی لوٹا نہ کہے، پاکستان میں سیاسی بحران کا واحد حل جلدازجلد الیکشن ہے۔