تازہ ترین
  • بریکنگ :- الزام تراشی ترک کرکےافغانستان کےمستقبل کی جانب دیکھناچاہیئے،وزیراعظم
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن کیلئےنئی حکومت کےساتھ تعاون کیاجائے،وزیراعظم
  • بریکنگ :- ماضی کی غلطیوں کودہرایا تو تمام فریق متاثرہوں گے،وزیراعظم
  • بریکنگ :- وزیراعظم عمران خان کا امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ میں مضمون
  • بریکنگ :- دہشتگردی کےخلاف جنگ اپنی بقا کے لیےلڑے ،وزیراعظم
  • بریکنگ :- بہترین فوج اورانٹیلی جنس آلات سےدہشتگردی کو شکست دی،وزیراعظم
  • بریکنگ :- افغان حکومتیں اپنے شہریوں کی نظروں میں مقام پیدا نہ کرسکیں،وزیراعظم
  • بریکنگ :- یہی وجہ تھی کوئی بھی ناکام افغان حکومت کیلئےلڑنےکوتیارنہیں تھا،وزیراعظم
  • بریکنگ :- کیا افغان فورسزکےہتھیارڈالنےپرپاکستان کوموردالزام ٹھہرایاجاسکتا ہے،وزیراعظم
  • بریکنگ :- حقیقت تسلیم کرنےکےبجائےافغان اورمغربی حکومتوں نے پاکستان پر الزام لگایا،وزیراعظم
  • بریکنگ :- پاکستان پرالزام لگانےکیلئےبھارت سےمل کرجعلی خبریں چلاتے رہے،وزیراعظم
  • بریکنگ :- الزامات کےباوجود پاکستان نے سرحد کی مشترکہ نگرانی کی پیشکش کی،وزیراعظم
  • بریکنگ :- محدود وسائل کےباوجودافغان سرحد پرباڑلگائی،وزیراعظم عمران خان
  • بریکنگ :- درست اقدام کےباعث دہشتگردی سے پاک افغانستان کاحصول ممکن ہوگا،وزیراعظم

کورونا سے بھارت میں تباہی جاری، ایک روز میں 3 لاکھ 70 ہزار سے زائد افراد متاثر

Published On 03 May,2021 09:17 am

نئی دہلی: (دنیا نیوز) کورونا سے بھارت میں تباہی جاری ہے، ایک روز میں 3 لاکھ 70 ہزار سے زائد افراد وائرس سے متاثر ہوئے۔ مزید تین ہزار 422 ہلاکتیں ہوئیں۔ مرنے والوں کی مجموعی تعداد 2 لاکھ 19 ہزار تک پہنچ گئی۔ اپوزیشن نے ملک بھر میں مفت ویکسین لگانے کا مطالبہ کیا ہے۔

بھارت میں کورونا وائرس سے صورتحال انتہائی تشویشناک، ایک روز میں مزید 3 لاکھ 70 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہوئے، چوبیس گھنٹے میں تین ہزار 422 افراد لقمہ اجل بن گئے۔ مرنے والوں کی مجموعی تعداد 2 لاکھ 19 ہزار تک پہنچ گئی۔

بھارت میں کئی روز سے یومیہ تین لاکھ سے زیادہ نئے کیس رپورٹ ہو رہے ہیں، دارالحکومت دلی میں صورت حال سنگین ہے، جے پور گولڈن ہسپتال میں چند گھنٹوں کی آکسیجن رہ گئی۔ کئی علاقوں میں لواحقین اپنی مدد آپ کے تحت مریضوں کے لیے آکسیجن اور وینٹی لیٹرز کا انتظام کرنے میں مصروف ہیں۔

مریضوں کی تعداد میں اضافے کے ساتھ ہی بھارت کے نظام صحت پر شدید دباؤ ہے،کورونا مریضوں کیلئے مختص ہسپتال اور طبی عملہ کم پڑ چکا ہے۔برطانیہ نے ایک ہزار وینٹی لیٹرز بطور امداد بھارت بھیجنے کی یقین دہانی کرائی ہے، وزیراعظم بورس جانس نے ٹویٹر پر ایک پیغام میں کہا ہے کہ
برطانیہ ضرورت کے وقت ہمیشہ بھارت کے ساتھ ہوگا۔