تازہ ترین
  • بریکنگ :- چھوٹےبھائی وجاہت حسین نےگھرمیں لوگوں سےچندباتیں کی ہیں،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- چودھری وجاہت نےآصف زرداری سےمتعلق الزام تراشی کی،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- چودھری وجاہت نےیہ کہاہےتونہایت بیہودہ باتیں ہیں،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- وجاہت حسین نےکہاطارق بشیرچیمہ نےہمارےخاندان کوتقسیم کردیا،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- طارق بشیرچیمہ سےمتعلق بیان جھوٹ پرمبنی ہے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- الزام لگایامیرےبیٹےمانگےتانگےکےوزیرہیں،ان کا کوئی حلقہ نہیں ،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- ان باتوں کاجواب کسی وقت گجرات جا کردوں گا ،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- میرےبیٹوں پرالزام لگایا کہ انہوں نےڈالر مانگے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- میں نےبیٹوں کی ایسی تربیت نہیں کی،چودھری شجاعت حسین
  • بریکنگ :- میرے کہنے پر بچے فی الحال خاموش ہیں، چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- بیٹوں کوتلقین کی ہےہمیشہ سچ بولنااوروعدےکاپاس رکھناہے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- میرےکہنےپراپوزیشن کےمتفقہ امیدوارشہبازشریف کوووٹ ڈالاتھا،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- ہم نےکسی سےکوئی وزارت نہیں مانگی،چودھری شجاعت حسین
  • بریکنگ :- آصف زرداری نے خود آکرہمیں مبارکباد دی تھی،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- وجاہت حسین نےکہا(ن)لیگ سےاتحادختم نہ کیاتونئی جماعت بنالیں گے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- سیکڑوں پارٹیاں ہیں،ایک اوربن گئی توکیا فرق پڑےگا،چودھری شجاعت

عمران خان کی افغان صدر اشرف غنی سے ملاقات، افغان مفاہمتی عمل پر بات چیت

Published On 19 November,2020 02:42 pm

کابل: (دنیا نیوز) وزیراعظم کی افغان صدر اشرف غنی سے ون آن ون ملاقات ہوئی، جس میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم اور افغان صدر میں خطے کی سکیورٹی پر گفتگو ہوئی۔

صدارتی محل آمد پر عمران خان کا شاندار استقبال کیا گیا، چاق چوبند دستے نے گارڈ آف آنر پیش کیا۔ وزیراعظم نے افغان صدر کے ہمراہ گارڈ آف آنر کا معائنہ کیا۔ تقریب کے آغاز پر دونوں ملکوں کے قومی ترانے بجائے گئے۔ عمران خان اور افغان صدر اشرف غنی نے اپنے اپنے وفود کا تعارف کرایا۔

وزیراعظم عمران خان کا افغان صدارتی محل آمد پر شاندار استقبال

اس موقع پر وفود کی سطح پر مذاکرات بھی ہوئے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود نے افغان ہم منصب حنیف اتمر سے ملاقات کی، جس میں افغان امن عمل اور خطے کی صورتحال پر بات چیت ہوئی۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ خطے کا امن و استحکام، افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے، عمران خان کا ہمیشہ سے موقف رہا کہ افغان مسئلے کو طاقت کے ذریعے حل نہیں کیا جاسکتا، بین الافغان مذاکرات کا کامیابی سے ہمکنار ہونانا گزیر ہے، پاکستان خطے میں امن کیلئے اپنی مخلصانہ کاوشیں جاری رکھنے کیلئے پر عزم ہے۔