تازہ ترین
  • بریکنگ :- آرمی چیف جنرل قمرجاویدباجوہ کا بہاولپورکادورہ ، آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- آرمی چیف نےخیرپورٹامیوالی اوراسرانی میں تربیتی مشقوں کامشاہدہ کیا
  • بریکنگ :- آرمی چیف نےمیکنائزڈدستوں کی جنگی مشقوں کامشاہدہ کیا،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- مشقوں میں فارمیشنزنےجارحانہ حکمت عملی کےآپریشنزکیے،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- آرمی چیف نےفارمیشنزکی آپریشنل تیاریوں کوسراہا، آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- دشمن کوشکست دینےکیلئےچیلنجز سےنمٹنےکی تربیت ضروری ہے،آرمی چیف
  • بریکنگ :- پاک فوج داخلی سالمیت وملکی سلامتی کیلئےکسی خطرےسےنمٹنےکیلئے تیار ہے، آرمی چیف
  • بریکنگ :- کور کمانڈربہاولپورلیفٹیننٹ جنرل خالدضیانےآرمی چیف کااستقبال کیا

فواد چودھری کی پی ڈی ایم جلسے کے بعد فضل الرحمان کے پھر بیمار ہونے کی پیشگوئی

Published On 28 August,2021 12:33 pm

کراچی: (دنیا نیوز) فواد چودھری نے پی ڈی ایم جلسے کے بعد فضل الرحمان کے پھر بیمار ہونے کی پیش گوئی کر دی۔ انہوں نے کہا کہ نون لیگ پہلے قیادت کا انتخاب کرے پھر جلسے کرے، شریف فیملی شادیاں ضرور کرے لیکن قوم کے پیسے سے نہیں، انہیں لوٹی ہوئی دولت واپس کرنا ہوگی۔

 وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کے حالات پر ہماری گہری نظر ہے، عالمی طاقتوں نے آنکھیں بند کرلیں تو افغانستان کا بحران بڑھ سکتا ہے، دنیا ان خطرات کو سمجھے، پاکستان کے مشورے پر عمل کیا ہوتا تو صورتحال بہتر ہوتی، ہمیں ایک دوسرے کی مدد کرنی ہے، فیصلے طاقت کے بجائے عقلمندی سے کرنے چاہئیں، افغانستان میں انتظامی انخلا سب سےبڑا مسئلہ ہے، دنیا افغانستان کے عوام کو تنہا نہ چھوڑے، افغانستان میں خلا کو نظر انداز کیا گیا تو بحرانی کیفیت پیدا ہوسکتی ہے، پاکستان نے افغانستان کے حوالے سے پہلے ہی خدشات ظاہر کیے تھے، انخلا کے عمل میں پاکستان کی کاوشوں کی دنیا متعرف ہے۔

فواد چودھری کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی اور ن لیگ علاقائی جماعتیں بن گئی ہیں، مریم نواز اور بلاول نے زندگی میں کچھ کیا ہی نہیں، بلاول، مریم نواز نے آج تک مسائل پر پالیسی ڈائریکشن نہیں دی، پی ٹی آئی نے 3 سال کی کارکردگی سامنے رکھی، مراد علی شاہ 13 سال کی کارکردگی سامنے رکھیں، ان کی سیاست صرف عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنانا ہے، پاکستان معاشی اور سیاسی استحکام کی جانب بڑھ رہا ہے، پیپلزپارٹی اور ن لیگ علاقائی جماعتیں بن گئی ہیں۔