تازہ ترین
  • بریکنگ :- آپ کواسلام آبادآنے کی دعوت دینے آیا ہوں،عمران خان
  • بریکنگ :- یہ جتنی دیرحکومت میں رہیں گے اتنا ہی ذلیل ہوں گے،عمران خان
  • بریکنگ :- ملتان:جتنی دیر یہ لوگ چلیں گےسری لنکا والا حال ہوگا، عمران خان
  • بریکنگ :- یہ پاکستان کوسری لنکا والی صورتحال کی طرف لےکرجارہے ہیں،عمران خان
  • بریکنگ :- سوشل میڈیا پرمجھےکسی نے مریم نوازکی تقریربھیجی،عمران خان
  • بریکنگ :- مریم نوازنےتقریرمیں جذبےاورجنون سےاتنی بارمیرا نام لیا،عمران خان
  • بریکنگ :- مریم نوازمیرانام دھیان سےلیاکروکہیں تمہاراخاوندناراض نہ ہوجائے،عمران خان
  • بریکنگ :- سوچتا ہوں ان کواتنا زیادہ مجھ پرغصہ کیوں ہے،عمران خان
  • بریکنگ :- ان کے تمام کیسزتوپیپلزپارٹی دورمیں بنے،عمران خان
  • بریکنگ :- مقصودچپڑاسی کیس کے علاوہ باقی سب پرانے ہیں،عمران خان
  • بریکنگ :- سازش کرنےوالوں نےباپ کووزیراعظم اوربیٹےکووزیراعلیٰ بنادیا،عمران خان
  • بریکنگ :- ہماری قوم نہیں نکلے گی تو ہم 2 غلامیاں کریں گے ، عمران خان
  • بریکنگ :- ایک غلامی امریکاکی اور دوسری ان ڈاکوؤں کی ،عمران خان
  • بریکنگ :- جیل میں تھاتوکوئی طاقتورڈاکونظرنہیں آیا،عمران خان
  • بریکنگ :- قومی اسمبلی میں جاتاتھا تووہاں بڑے مجرم اورڈاکونظرآتےتھے،عمران خان
  • بریکنگ :- شہبازشریف اورحمزہ نے 16ارب روپےملازمین کےاکاؤنٹ میں بھجوائے،عمران خان

عالمی برادری افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کیلئے اقدامات کرے:قومی سلامتی کمیٹی

Published On 08 October,2021 09:28 am

اسلام آباد:(دنیا نیوز)وزیراعظم کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔ اجلاس میں اس بات پر زور دیا گیا کہ عالمی برادری افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کیلئے اقدامات کرے، قومی سلامتی کمیٹی کا پڑوسی ملک میں دنیا کے بھرپور اور فوری کردار پر زور، پرامن، مستحکم اور خود مختار افغانستان کے عزم کا بھی اعادہ کیا گیا۔

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا، جس میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان، ڈی جی آئی ایس آئی، خارجہ، داخلہ ، دفاع اور خزانہ کے وفاقی وزراء اور مشیر قومی سلامتی امور نے شرکت کی۔

اجلاس میں وزیر اعظم کو علاقائی سلامتی کی صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ جبکہ اجلاس میں خطے کی مجموعی صورتحال پر غور کیا گیا۔

جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق اجلاس میں وفاقی وزرا،مسلح افواج کے سربراہان ، انٹیلی جنس سروسز چیفس نے شرکت کی۔

اعلامیہ میں بتایا گیا کہ افغانستان میں حالیہ پیش رفت اور پاکستان پر ان کے ممکنہ اثرات پر بھی بریفنگ دی گئی جبکہ شرکا نے افغانستان میں بین الاقوامی برادری کے فوری کردار پر زور دیا۔

اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ عالمی دنیا افغانستان میں انسانی بحران سے بچنے کیلئے مدد فراہم کرے۔

قومی سلامتی کمیٹی اجلاس میں کہا گیا کہ خطے میں ابھرتی ہوئی صورت حال انتہائی پیچیدہ ہے، افغانستان میں کسی بھی عدم استحکام کے پاکستان پر شدید اثرات ہو سکتے ہیں جبکہ وزیر اعظم نے مربوط پالیسی کی کوششوں کی ضرورت پر زور دیا۔

اعلامیہ میں مزید کہا گیا کہ وزیراعظم نے خصوصی ہدایت کی کہ حکومتی سطح پر افغانستان سے متعلق کوشش سیل بنایا جائے، سیل افغانستان کے لیے انسانی امداد کے بین الاقوامی روابط میں کردار ادا کرے گا جبکہ خصوصی سیل موثر بارڈر مینجمنٹ اور کسی بھی منفی پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کام کرے گا۔

قبل ازیں اجلاس میں وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سیاسی اور عسکری قیادت نے اس عزم کا اظہار کیا کہ قوم کی حمایت سے ملک کو درپیش تمام چیلنجز کا کامیابی کیساتھ مقابلہ کیا جائے گا۔