تازہ ترین
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی نےتاجروں کومشکل وقت میں اکیلانہیں چھوڑا،گورنرسندھ
  • بریکنگ :- تاجروں کودکانیں چلانےکیلئےفنڈزکی ضرورت ہے،عمران اسماعیل
  • بریکنگ :- وزیراعظم نےکامیاب جوان پروگرام کاآغازکیاہے،گورنرسندھ
  • بریکنگ :- کراچی:دکانوں کوچلانےکیلئےقرض لیےجاسکتےہیں،گورنرسندھ
  • بریکنگ :- کراچی:قرض کیلئےنوجوان درخواست جمع کرائیں،عمران اسماعیل

نئے ڈی جی آئی ایس آئی کی تقرری، آئینی اور قانونی تقاضے پورے کیے جائینگے: فواد

Published On 12 October,2021 04:38 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ ڈی جی آئی ایس آئی کی تقرری وزیراعظم کی اتھارٹی ہے، معاملے پر مکمل اتفاق رائے موجودہے، تمام آئینی اور قانونی تقاضے پورے کیے جائیں گے۔

وفاقی کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اطلاعات فواد چودھری کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے کابینہ کوڈی جی آئی ایس آئی کے حوالے سے اعتماد میں لیا، گزشتہ رات کو وزیراعظم اورآرمی چیف کی بہت طویل نشست ہوئی، جنرل باجوہ اوروزیراعظم کے آپس میں بہت ہی قریبی اوربہت ہی خوشگوارتعلقات ہیں، یہ پاکستان کی تاریخ کے ضمن میں بھی بہت اہم بات ہے، سول اورملٹری کے درمیان بہت آئیڈیل تعلقات ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پربہت سارے لوگوں کی خواہشات ہیں، جن کی خواہشات ہیں ان کوبتادوں کبھی بھی وزیراعظم آفس کچھ ایسا ہرگزقدم نہیں اٹھائے گا جس سے پاکستان کی فوج کی عزت میں کمی ہو، یہ بھی بتادوں پاکستان کی فوج کوئی ایسا قدم نہیں اٹھائیں گے جس سے پاکستان کے وزیراعظم آفس یا سول سیٹ اپ کی عزت میں کمی ہو، دونوں کا ایک دوسرے انتہائی قریبی رابطہ اورتعلق ہے،

فواد چودھری کا کہنا تھا کہ نئے ڈی جی آئی ایس آئی کی تقرری کے لیے قانونی طریقہ اختیارکیا جائے گا، اس کے اوپربھی دونوں کا اتفاق رائے ہے، دونوں میں اتفاق رائے ہے کہ اتھارٹی وزیراعظم کی ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل  پاک فوج میں تبادلے کے معاملے پر وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ ارکان کو اعتماد میں لیا۔

اجلاس کے دوران وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اہم عہدوں پر تعیناتیوں کے حوالے سے کوئی اختلاف نہیں،ہم سب ایک پیج پر ہیں، جلد معاملہ حل کر لیں گے، نوٹیفکیشن کے معاملے کو غلط رنگ نہ دیا جائے۔

میڈیا سے گفتگو کے دوران وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ رحمت للعالمین اتھارٹی بچوں کیلئے تعلیمی نصاب کے حوالے سے کام کریگی، اتھارٹی کامقصد ہے کہ ہم سیرت نبی ﷺ سے سبق حاصل کریں، رحمت للعالمین اتھارٹی میں پاکستان سمیت دنیا کے سکالرز شامل ہوں گے۔

فواد چودھری نے کہا کہ محسن پاکستان اور ایٹمی سائنسدان کے خالق ڈاکٹر عبدالقدیر کی نماز جنازہ میں 15 سے زائد وزرا شریک تھے، ہمارے وزار میں یہ چیز نہیں ہے کہ ہم ہر جگہ پر اپنی تصاویر بنوائیں، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف اور نیول چیف بھی نماز جنازہ میں شریک تھے۔

انہوں نے کہا کہ ایئر سیال لمیٹڈ کو لائسنس کا اجرا کیا گیا ہے، 18اداروں کی اسامیاں ختم کی جارہی ہیں، 80 کے قریب ٹاپ لیول کی تعیناتیاں کر چکے ہیں، یوٹیلٹی سٹورز پر 5لاکھ میٹرک ٹن گندم کی ضرورت ہے، یوٹیلٹی سٹورز پر 3 لاکھ میٹرک ٹن گندم فراہم کردی گئی۔

وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اسلام آباد پولیس میں ایک نیا یونٹ بنانے سے متعلق بریفنگ دی گئی، یونٹ میں کیمرے اور ڈرون ٹیکنالوجی شامل ہے۔ افغانستان سے آنے والوں کیلئےویزہ فیس ختم کردی گئی ہے۔

فواد چودھری کا کہنا تھا کہ اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کی سہولت لازمی دینا چاہتے ہیں، ہمارا ایسا کوئی اجلاس نہیں ہوا جس میں اوورسیز پاکستانیوں کی بات نہ ہو۔