تازہ ترین
  • بریکنگ :- کراچی:ماڑی پورروڈپربجلی بندش کیخلاف احتجاج کامعاملہ
  • بریکنگ :- کراچی:منتشرہونےوالےمظاہرین کاپولیس پردوبارہ پتھراؤ
  • بریکنگ :- کراچی:پولیس نےمظاہرین کوپھرمنتشرکردیا
  • بریکنگ :- کراچی:مظاہرین گھروں کی چھتوں اورگلیوں میں موجود

مظفرگڑھ: زہریلی لسی پینے سے ہلاکتوں کا معاملہ زبردستی شادی کا شاخسانہ نکلا

Published On 30 Oct 2017 11:29 AM 

نئی نویلی دلہن نے زبردستی شادی کا انتقام لینے کیلئے شوہر کے دودھ میں زہر ڈالا، والدہ نے دودھ کی لسی بنا دی، پولیس نے مبینہ ملزمہ آسیہ کو حراست میں لے لیا۔

مظفر گڑھ: (دنیا نیوز) مظٖفر گڑھ کے علاقے علی پور میں زہریلی لسی پینے سے ہلاکتوں کا معاملہ نیا رخ اختیار کرگیا۔ ہلاکتیں دودھ میں چھپکلی گرنے سے نہیں بلکہ زہر ملانے سے ہوئیں۔ نئی نویلی دلہن نے زبردستی شادی کا انتقام لینے کیلئے شوہر کے دودھ میں زہر ڈالا۔ والدہ نے دودھ کی لسی بنا دی، پولیس کی مبینہ ملزمہ آسیہ سے پوچھ گچھ جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق بستی والوٹ کے رہائشی اکرم کے بیٹے امجد کی شادی ایک ماہ قبل آسیہ سے ہوئی تھی، شادی زبردستی کرائی گئی تھی جس کا انتقام آسیہ نے لیا۔ آسیہ نے امجد کو دودھ کا گلاس دیا جو اس نے نہ پیا اور ایک طرف رکھ دیا۔ امجد کی ماں نے اسی دودھ میں اور دودھ ملا کر دہی جمالی۔ اگلی صبح اسی دہی سے زہریلی لسی بنی جسے پینے سے 27 افراد متاثر ہوئے جن میں 13 دم توڑ گئے۔ پولیس نے آسیہ اور اسکے مبینہ دوست کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کر دی ہے۔