تازہ ترین
  • بریکنگ :- وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اجلاس
  • بریکنگ :- وفاقی حکومت کافوجداری مقدمات کاقانون بدلنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- فوجداری مقدمات میں ترمیم سمیت نئےقوانین لانےکی منظوری
  • بریکنگ :- آئینی ترامیم آئندہ ہفتےکابینہ میں پیش کی جائیں گی
  • بریکنگ :- ایف آئی آردرج نہ کرنے پر ایس پی کودرخواست دی جاسکے گی، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- اسلام آباد: 9 ماہ میں مقدمات کافیصلہ لازمی ہوگا، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- مقدمات کافیصلہ نہ ہونےپرمتعلقہ ججزہائیکورٹ کوجوابدہ ہوں گے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- 9ماہ میں ٹرائل مکمل کرنےپرججزکیخلاف ہائیکورٹ انضباطی کارروائی کرسکےگی، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- تھانوں کواسٹیشنری،ٹرانسپورٹ سمیت ضروری اخراجات کے فنڈزملیں گے، فروغ نسیم
  • بریکنگ :- عام جرائم کےکیسزمیں 5 سال تک کی سزاکیلئےپلی بارگین کی جاسکےگی، فروغ نسیم

پاکستان اور ایف اے ٹی ایف کے مذاکرات کا پہلا دور مکمل

Last Updated On 08 October,2018 10:57 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) پاکستانی حکام نے منی لانڈرنگ اور دہشتگردوں کی مالی معاونت روکنے کے لیے قوانین میں مجوزہ ترامیم پر بریفنگ دی۔ وفد ایف آئی اے، ایف بی آر، نیب، ایس ای سی پی اورانٹی نارکوٹکس فورس کے اقدامات کا بھی جائزہ لے گا۔

ذرائع کے مطابق پاکستان کے دورے پر آئے ایف اے ٹی ایف وفد کو بتایا گیا کہ پاکستان نے منی لانڈرنگ میں ملوث افراد کی سزائیں بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ قوانین میں ترامیم کابینہ سے منظوری کے بعد پارلیمنٹ سے منظور کرائی جائینگی۔ ترامیم کے بعد پاکستان دوسرے ممالک کو درکار معلومات بھی فراہم کر سکے گا۔

گیارہ روزہ دورے کے دوران ایف اے ٹی ایف کی ٹیم ایف آئی اے، ایف بی آر، نیب، ایس ای سی پی اورانٹی نارکوٹکس فورس کے اقدامات اور دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے کے لیے اقدامات کا جائزہ لے گی۔

وفد انیس اکتوبر تک پاکستان میں رہے گا جس کے بعد پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے یا پھر بلیک لسٹ میں شامل کرنے کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا۔