تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید567 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 12 لاکھ 67 ہزار 393 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 16 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 344 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 39 ہزار 200 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر1704 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 1.44 فیصدرہی،این سی اوسی

اسلم رئیسانی ،لشکری رئیسانی کی بریت کی درخواست مسترد

Published On 02 September,2021 10:52 pm

کوئٹہ: (دنیا نیوز) احتساب عدالت کوئٹہ نے اکیساسی کروڑ روپے کے کرپشن ریفرنس میں سابق وزیراعلیٰ بلوچستان اسلم رئیسانی اور سابق سینیٹر لشکری رئیسانی کی بریت کی درخواستیں مسترد کر دیں۔ نیب سے ملزمان کے خلاف شہادتیں بھی طلب کرلیں۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعلیٰ بلوچستان اسلم رئیسانی اور سابق سینیٹر لشکری رئیسانی کے خلاف کرپشن ریفرنسز پر احتساب عدالت کوئٹہ نے بریت کی درخواستیں مسترد کر دیں۔

احتساب عدالت کے جج اللہ داد روشن نے فیصلے میں کہا کہ یہ نہیں کہا جاسکتا کہ شواہد نہیں ہیں اور الزام بےبنیاد ہے۔ اسلم رئیسانی اور لشکری رئیسانی پر بدعنوانی اور اختیارات سے تجاوز کا الزام تھا جس سے قومی خزانہ کو 81 کروڑ 70 لاکھ روپے کا نقصان پہنچا۔ مقدمے سے بری نہیں کیاجا سکتا۔

نیب بلوچستان نے چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کی منظوری کے بعد سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب اسلم رئیسانی، ان کے بھائی سابق سینیٹر لشکری رئیسانی اور چھ دیگر ملزمان کے خلاف کرپشن ریفرنس دائر کیا تھا۔ ملزمان نے دفعہ 265 کے ، کے تحت کرپشن کے مقد مے میں بریت کی درخواست دائر کی تھی۔