تازہ ترین
  • بریکنگ :- لاکھوں افغان باشندےغیریقینی صورتحال کاسامناکررہےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- افغان عوام کومعاونت کی ضرورت ہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- اوآئی سی کوافغان عوام کی مددکیلئےآگےآناہوگا، شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- اسلام آباد:وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کا ویڈیو بیان
  • بریکنگ :- افغان صورتحال پرسعودی عرب کی جانب سےاوآئی سی وزرائےخارجہ کااجلاس طلب
  • بریکنگ :- پاکستان افغان معاملےپرہنگامی اجلاس کی حمایت کرتاہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- اوآئی سی اجلاس کی 17دسمبرکوپاکستان میں میزبانی کی پیشکش کرتےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- امیدہےاوآئی سی کےرکن پیشکش کی حمایت کریں گے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- افغانستان او آئی سی کا بانی رکن ہے، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- افغانستان کواس وقت انسانی بحران کا سامنا ہے،وزیرخارجہ

اسلام آباد ہائیکورٹ: نیب ترمیمی آرڈیننس کیخلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو نوٹس

Published On 21 October,2021 11:53 am

اسلام آباد: (دنیا نیوز) اسلام آباد ہائی کورٹ نے نیب ترمیمی آرڈیننس کے خلاف درخواست پر وفاق، سیکریٹری قومی اسمبلی، سیکریٹری سینٹ اور سیکریٹری قانون کو نوٹس جاری کرتے ہوئے تین ہفتوں میں جواب طلب کرلیا ہے جبکہ اٹارنی جنرل کو آئندہ سماعت پر معاونت کی ہدایت کی ہے۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے نیب ترمیمی آرڈیننس کے خلاف ایک شہری عبدالطیف قریشی کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ نیب آرڈیننس کی سیکشن فور میں ترمیم کی گئی، جو قوانین پہلے تھے ان میں ترمیم کر کے بڑی کلاس کو اس میں سے نکال دیا گیا، آرڈیننس جاری کر کے کرپشن کو جواز فراہم کرنے کی کوشش کی گئی۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ چیئرمین کی تعیناتی کے طریقے کار کو بھی تبدیل کر دیا گیا، اگر ان اداروں کی کرپشن کو نکال دیا جائے تو پھر تو چپڑاسی ہی بچ جاتا ہے۔ عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے تین ہفتوں میں جواب طلب کرلیا۔