تازہ ترین
  • بریکنگ :- بلوچستان میں طوفانی بارشوں کے باعث تباہ کاریاں
  • بریکنگ :- بارشوں سےقلعہ عبداللہ،مسلم باغ،لسبیلہ،بارکھان سمیت دیگراضلاع میں تباہی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:مختلف اضلاع میں سیلابی صورتحال، مویشی ہلاک،رابطہ سٹرکیں بہہ گئیں
  • بریکنگ :- کوئٹہ:قلعہ عبداللہ میں 3 ڈیمزٹوٹ گئے ،10دیہات میں پانی داخل
  • بریکنگ :- کوئٹہ:قلعہ عبداللہ کے کئی دیہات میں ریسکیو آپریشن جاری
  • بریکنگ :- کوئٹہ:قلعہ عبداللہ کے کئی دیہات میں آمدورفت معطل
  • بریکنگ :- کوئٹہ:سیلابی پانی سے سیکڑوں گھر منہدم
  • بریکنگ :- کوئٹہ: ایک ہزارسے زائد افراد کوریسکیو کرلیا،ڈی جی پی ڈی ایم اے
  • بریکنگ :- کوئٹہ:ریسکیو کیےگئےافرادمیں خواتین اوربچےشامل،ڈی جی پی ڈی ایم اے
  • بریکنگ :- قلعہ عبداللہ میں سیلابی پانی کےباعث چمن کوئٹہ کےدرمیان ٹرینوں کی آمدورفت متاثر
  • بریکنگ :- کوئٹہ:بارکھان کےعلاقےبواٹہ میں 2گاڑیاں الٹنےسےٹریفک معطل
  • بریکنگ :- کوئٹہ:اوتھل میں سیلاب سےکوئٹہ کراچی قومی شاہراہ ٹریفک کیلئےبند

گورنرخیبرپختونخوا کا صدارتی نظام سے متعلق بیان، شیری رحمان کا مستعفی ہونے کا مطالبہ

Published On 31 January,2022 11:38 am

اسلام آباد: (دنیا نیوز) شیری رحمان نے گورنر خیبرپختونخوا سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ شاہ فرمان کا صدارتی نظام نافذ کرنے سے متعلق بیان قابل مذمت ہے۔

پیپلزپارٹی کی مرکزی نائب صدر سینیٹر شیری رحمان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت گورنر خیبر پختونخواہ کے بیان کی وضاحت دے، ان کا صدارتی نظام کے حق میں بیان غیر جمہوری اور غیر آئینی ہے، گورنر آئینی اور پارلیمانی عہدہ ہے، تحریک انصاف کی جماعت کا نہیں، پی ٹی آئی اب ثابت کرنے میں مصروف ہیں کہ ان کو نظام اچھا نہیں ملا، کل کو کہیں گے ہم کو حکومت کرنے کے لئے ملک بھی اچھا نہیں ملا۔

شیری رحمان کا کہنا تھا کہ حکومت اپنی نااہلی اور ناکامی کا ملبہ پارلیمانی نظام پر ڈال کر بری الذمہ نہیں ہو سکتی، پیپلز پارٹی گورنر خیبر پختونخوا سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتی ہے۔