چیف جسٹس عمر عطا بندیال ریٹائرمنٹ سے قبل کئی اہم مقدمات کے فیصلے نہ کرسکے

Published On 08 September,2023 07:58 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) سپریم کورٹ کے چیف جسٹس عمر عطاء بندیال ریٹائرمنٹ سے قبل کئی اہم مقدمات کے فیصلے نہ کرسکے، جسٹس عمر عطاء بندیال کا ریٹائرمنٹ سے قبل آخری ہفتہ 11 ستمبر سے شروع ہوگا۔

ذرائع کے مطابق فوجی عدالتوں میں سویلینز کے ٹرائل کیخلاف درخواستوں پر ازسرنو بینچ تشکیل دیا جائے گا، فوجی عدالتوں سے متعلق کیس میں بینچ کے رکن جسٹس یحییٰ آفریدی بیرون ملک ہیں، جسٹس یحییٰ آفریدی کی واپسی 15 ستمبر کو ہوگی جو کہ موجودہ چیف جسٹس کا آخری دن ہے۔

سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل کیس پر بھی از سر نو سماعت ہونے کا قوی امکان ہے، پریکٹس اینڈ پروسیجر کیس میں حکم امتناع کے بعد کوئی باضابطہ سماعت نہیں ہوسکی۔

یہ بھی پڑھیں: ججز پراعتراض عدلیہ کی آزادی پرحملے کے مترادف قرار، آڈیولیکس کمیشن کیس کا تفصیلی فیصلہ

آڈیو لیکس کمیشن کیخلاف درخواستوں پر بھی سماعت ازسر نو ہونے کا امکان ہے جبکہ ارشد شریف قتل از خود نوٹس بھی دو ماہ سے سماعت کیلئے نہ مقرر ہوسکا نہ تحقیقات مکمل ہوئیں۔

آڈیو لیکس، ارشد شریف قتل اور پریکٹس اینڈ پروسیجر کیسز سننے والے ججز آئندہ ہفتے اسلام آباد میں ہی موجود ہوں گے، ججز کی موجودگی کے باوجود تاحال تینوں مقدمات آئندہ ہفتے سماعت کیلئے مقرر نہ ہوسکے۔

علاوہ ازیں قاسم سوری رولنگ سوموٹو، آرٹیکل 63 اے کی تشریح پر نظرثانی درخواستوں پر بھی ازسرنو بینچز تشکیل دیے جانے کا امکان ہے۔

Advertisement