تازہ ترین
  • بریکنگ :- الیکٹرانک ووٹنگ مشین کےاستعمال کےحوالےسےاہم پیشرفت
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کےخط کےبعدحکومت کاالیکشن کمیشن سےرابطہ
  • بریکنگ :- چیف الیکشن کمشنرکی ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن سےملاقات،ذرائع
  • بریکنگ :- ملاقات میں سیکرٹری الیکشن کمیشن بھی موجودتھے،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکٹرانک ووٹنگ مشین اسٹوررومزکےحوالےسےبات چیت،ذرائع
  • بریکنگ :- ای وی ایم اسٹوررومزکیلئےمختلف مقامات کےحوالےسےگفتگوکی گئی
  • بریکنگ :- ایک ارب 20 کروڑکی لاگت سےفیلڈدفاترکی تعمیرپربات چیت،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کی ڈیٹابیس اسٹوریج سےمتعلق معاملات پربات چیت،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کاپروجیکٹ مینجمنٹ کیلئے 20افرادبھرتی کرنےکافیصلہ،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کی ای وی ایم اسٹوریج کیلئےجگہ دینےکی منظوری،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کی ڈپارٹمنٹل ڈیویلپمنٹ ورکنگ پارٹی نےمنظوری دی،ذرائع
  • بریکنگ :- ای وی ایم اسٹوریج کیلئے 2کروڑ 23لاکھ روپےکی منظوری دےدی،ذرائع
  • بریکنگ :- عمارت کیلئےپلاننگ کمیشن نےرقم کی منظوری نہیں دی،ذرائع
  • بریکنگ :- پلاننگ کمیشن کی جنوری،فروری میں اسٹوریج منصوبےکی منظوری دلانے کی یقین دہانی
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کےمنصوبےکی این ای سی میں حمایت کریں گے،پلاننگ کمیشن
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کو 3سے 4لاکھ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کواسٹورکرناہوگا،ذرائع
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن کےپنجاب میں فیلڈدفاترکیلئےفنڈزکی منظوری نہ ہوسکی،ذرائع

کرونا وائرس، اقوام متحدہ کا غریب ممالک میں 10 کھرب ڈالر کی سرمایہ کاری کا عندیہ

Last Updated On 01 April,2020 02:10 pm

نیویارک: (دنیا نیوز) کرونا وائرس کے عالمی معیشت پر پڑنے والے اثرات کو کم کرنے کے لیے اقوام متحدہ نے 4 نکاتی منصوبہ تیار کر لیا ہے جس کے تحت غریب ممالک میں 10 کھرب ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائیگی۔

عالمی سطح پر لاک ڈاون کے باعث دنیا بھر کے ممالک کو شدید معاشی نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے۔ اسی پریشانی کو دیکھتے ہوئے اقوام متحدہ نے 4 نکاتی منصوبہ تیار کیا ہے جس کے تحت پہلے مرحلے میں کمزور معیشتوں میں 10 کھرب ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائیگی اور یہ رقم عالمی مالیاتی فنڈز سے دی جائیگی۔

دوسرے مرحلے میں کمزور معیشتوں کے قرضوں کو منجمد کردیا جائیگا اور ساتھ ہی قرضوں کی ادائیگی کےلیے ریلیف دیا جائیگا۔ تیسرے مرحلے میں غریب ممالک کے صحت وسماجی پروگرامز میں 500 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائیگی جبکہ چوتھے مرحلے میں ترقی پزیر ممالک سے سرمائے کے اخراج کوکم کرنے کے اقدامات لیے جائینگے۔ جس سے ان ممالک کی کرنسی کی قدر کو گرنے اور اثاثوں کی قیمتوں میں کمی کو روکنے میں مدد ملے گی۔