تازہ ترین
  • National :- بھارت چھپاناچاہتاہےکہ مقبوضہ کشمیر میں کیا ہو رہا ہے ،اسدعمر
  • National :- صحیح اور غلط میں فرق اس سے زیادہ واضح نہیں ہو سکتا،اسدعمر
  • National :- وزیراعظم کی بہترین پالیسیوں کی بدولت کوروناپرقابوپانےمیں مددملی،مرادسعید
  • National :- موٹروےپولیس نےبھی دہشت گردی کےخلاف جنگ میں جانوں کی قربانی دی،مرادسعید

کورونا ویکسین ختم ہونے کی خبریں جعلی ہیں: ڈاکٹر یاسمین راشد

Published On 08 May,2021 07:19 pm

لاہور: (دنیا نیوز) صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر جعلی خبریں پھیلائی جارہی ہیں کہ کوروناویکسین ختم ہو گئی ہے۔

صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ ہمارے پاس ویکسین ختم نہیں ہوئی بلکہ وافرمقدار میں موجود ہے، جون کےآخرتک 15سے20فیصد آبادی کوویکسین لگانے کی کوشش ہے، کین سائنو،سائنوفارم لاکھوں لوگوں کولگ چکی کسی قسم کی کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ چینی ویکسین کاشماردنیاکی بہترین ویکسین میں ہوتاہے۔ چینی ویکسین دنیاکی بہترین ویکسینزمیں سےایک ہے۔ 40سال سےزائدعمرکےافراد کوبھی چند روزبعد واک ان ویکسین کی اجازت ہوگی۔ 3کروڑویکسین کی ادائیگیاں ہوچکی ہیں۔

دوسری طرف ترجمان پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کیئر پنجاب کا کہنا ہے کہ ملک میں ویکسین کی کمی کی افواہیں درست نہیں ہیں۔

ترجمان کے مطابق پنجاب میں کینسائینو سمیت کسی ویکسین کی کمی نہیں، کنسائینو سنگل ڈوزصرف 70 سال سے زائد عمر کے افرادکو لگائی جا رہی ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ بزرگوں کوسنگل ڈوز لگانےکامقصد انہیں سینٹرز کے چکر لگانے سے بچانا ہے۔

دوسری جانب نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشنز سینٹر کی جانب سے ویکسین کے حوالے سے جاری اعدا و شمار کے مطابق اب تک1 کروڑ 1 لاکھ 90 ہزار ویکسین کی خوراکیں موصول ہوچکی ہیں، موصول ہونے والی ویکسین میں سائنوفارم، سائنوویک، کینسائنو شامل ہیں۔

این سی او سی کا کہنا ہے کہ12 لاکھ 30 ہزار ایسٹرازینکا ویکسین آج پاکستان پہنچ گئی، ایسٹرازینیکا ویکسین کوویکس پروگرام کے تحت پاکستان پہنچی ہے۔

این سی او سی کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق 10 لاکھ سائنوویک ویکسین کی خوراکیں کل پاکستان پہنچیں گی، مزید ویکسین 13اور15مئی کو پاکستان پہنچیں گی، 15لاکھ مزید ویکسین اس ماہ کے آخر تک پہنچنے کا امکان ہے۔

اعلامیہ میں این سی او سی نے تمام شہریوں بالخصوص 60سال سے زائد بزرگ افراد کو ویکسین لگانے کا مشورہ دیا اور کہا کہ 60سال اور اس سے زائد افراد اس وبا سے زیادہ متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔