تازہ ترین
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 7586 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 13لاکھ 67 ہزار 605 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 70 ہزار 263 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 20 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 29 ہزار 97 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 647 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 12 لاکھ 68 ہزار 245 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 58 ہزار 334 کوروناٹیسٹ کیےگئے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 2 کروڑ 45 لاکھ 32 ہزار 952 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 1083 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 62 ہزار 323،سندھ میں 5 لاکھ 23 ہزار 774 کیسز
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 84 ہزار 455،بلوچستان میں 33 ہزار 910 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آبادایک لاکھ 17 ہزار 436،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 489 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 35 ہزار 218 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 13 فیصدرہی،این سی اوسی

عید تک کیسز بڑھیں گے، کورونا ایڈوائزری گروپ نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

Last Updated On 12 May,2020 01:45 pm

لاہور: (دنیا نیوز) لاک ڈاؤن میں نرمی اور پنجاب بھر میں بڑھتے کیسز و اموات پر کورونا ایڈوائزری گروپ نے سر پکڑ لیا۔ عید تک کیسز بڑھنے کے خدشے سے آگاہ کر کے خطرے کی گھنٹی بجا دی۔

کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ کے رکن پروفیسر اسد اسلم کا کہنا تھا کہ احتیاط اورسختی ہی کورونا سے بچنے کا واحد طریقہ ہے، لاک ڈاؤن کھلنے سے کیسز بڑھ گئے ہیں۔ کورونا علامات کیساتھ گھر رہنے، ٹیسٹ نہ کرانے سے اموات بڑھیں۔

وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز و رکن کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ پروفیسر جاوید اکرم کا کہنا تھا کہ بازار کھلنے سے کورونا کی منتقلی کا عمل بڑھ گیا، عید تک کیسزمیں ریکارڈ اضافہ ہو سکتا ہے۔ عید کے بعد حکومت کو دوبارہ سخت لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑ سکتا ہے۔

رکن کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ پروفیسر جاوید حیات کا کہنا تھا کہ مارکیٹوں اور دکانوں کو دن میں دو بار کلوری نیٹ کیا جائے، سماجی فاصلے نہ رکھے گئے تو شدید مشکل میں آ سکتے ہیں۔ مارکیٹ، بازار وائرس کے پھیلاؤ کا سبب بن رہے ہیں، وائرس کا کیریئر بننے سے گھروں میں بزرگ افراد متاثر ہو سکتے ہیں جن سے اموات کا خدشہ ہے۔

رکن کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ ڈاکٹر صومیہ اقتدار کا کہنا تھا کہ جولائی تک کیسز کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو گا، محفوظ رہنے کیلئے پہلے سے زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے تاکہ اس مہلک وائرس سے بچا جا سکے۔