تازہ ترین
  • بریکنگ :- سندھ حکومت تعلیمی ادارے اور اسپتال بلدیہ کو واپس کرنے پر تیار،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- آکٹرائے اور موٹر وہیکل ٹیکس میں سےبھی بلدیہ کراچی کو حصہ ملے گا،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- کراچی: مئیر کراچی واٹر بورڈ کے چیئرمین ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- بلدیہ کو خود مختار بنانے کیلئےمالی وسائل دینےپر سندھ حکومت تیار، ناصر حسین
  • بریکنگ :- کراچی: بلدیاتی قانون پر جماعت اسلامی اور سندھ حکومت کے مذاکرات کامیاب
  • بریکنگ :- سندھ حکومت اور جماعت اسلامی کےدرمیان تحریری معاہدہ
  • بریکنگ :- جماعت اسلامی کا دھرنا ختم کرنے کا اعلان،کارکنان گھروں کو روانہ
  • بریکنگ :- کراچی: آج کے اعلان کیے گئے دھرنے بھی ختم کر دیئے ہیں،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آپ کو تاریخی جدوجہد کرنے پرمبارکباد پیش کرتا ہوں،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آپ نے ساڑھے تین کروڑ عوام ہی نہیں پورے ملک کو حیران کردیا،حافظ نعیم
  • بریکنگ :- ہم استقامت کے ساتھ 29 دن دھرنے پر بیٹھے رہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:سندھ حکومت اور جماعت اسلامی نے مل کر ایک مسودہ بنایا ہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:2021 کا ترمیمی بل اب ختم ہو جائےگا،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آج میڈیا کے سامنے وزیر بلدیات نے ہمارے مطالبات تسلیم کیے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- ہم اس معاہدے پر عمل بھی کروائیں گے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:صوبائی فنانس کمیشن کے قیام پر رضامندہیں،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- مئیر اور ٹاؤن چیئرمین کمیشن کے ممبر ہوں گے،ناصر حسین شاہ

منی لانڈرنگ کی روک تھام، نیب کی فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کو بریفنگ

Last Updated On 18 October,2018 09:31 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) فنانشل ایکشن ٹاسک فورس ایشیا پیسفک گروپ اور نیب حکام کی تین روز میں دس ملاقاتیں ہوئی ہیں۔ نیب نے منی لانڈرنگ روکنے سے متعلق اقدامات اور اب تک کے مقدمات سے آگاہ کر دیا۔

ذرائع کے مطابق نیب حکام نے بریفنگ میں ایف اے ٹی ایف ایشیا پیسفک گروپ کو منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئے اب تک کے اقدامات اور مقدمات کی تفصیل سے آگاہ کیا۔

ایف اے ٹی ایف کو بتایا گیا کہ منی لانڈرنگ میں ملوث افراد کو عدالتوں سے سزائیں دلوائی جا رہی ہیں، ایسے افراد کیساتھ کوئی رعایت نہیں کی جائے گا۔ وفد کو نیب کی مجموعی کارکردگی کے متعلق بھی بریف کیا گیا۔

دوسری جانب پاکستان فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے سرتوڑ کوششیں کر رہا ہے، اس سلسلے میں ایشیا پیسفک کمیٹی کے وفد سے مذاکرات بعد قانون سازی کو جدید بنانے کے لیے طریقہ کار طے کرنے پر اتفاق ہو گیا ہے۔

اسلام آباد میں وزارت خزانہ کے ذرائع نے دنیا نیوزکو بتایا کہ ایف اے ٹی ایف، ایشیا پیسیفک کمیٹی کے ساتھ مذاکرات آج مکمل ہو جائیں گےاور وفد کل پاکستان سے روانہ ہو جائے گا۔

ایف اے ٹی ایف کی شرائط پر عملدرآمد اور اقدامات پر کام کا آغاز ہو گیا ہے، پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کو اینٹی منی لانڈرنگ قوانین مزید سخت کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

ایف آئی اے ایکٹ 1974ء اور سٹیٹ بینک ایکٹ 1947ء میں ترامیم کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے اور اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ 2010ء میں بھی ترمیم کی جائے گی۔
منی لانڈرنگ کرنے والے کی جائیداد تین کے بجائے 6 ماہ تک ضبط کی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق قوانین پر عملدرآمد کیلئے ٹاسک فورس بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ٹاسک فورس سیکرٹری داخلہ کی سربراہی میں بنائی جائے گی۔ ٹاسک فورس کے دفاتر ملک کے تمام ایئرپورٹس پر قائم کئے جائیں گے۔ وفاقی اور صوبائی سطح پر بھی اینٹی منی لانڈرنگ ٹاسک فورس کو فعال بنانے کے لیے اقدامات کریں گی۔

یہ ٹاسک فورس کرنسی، سونا، چاندی اور دیگر اشیا کی بیرون ملک سمگلنگ کی سزا میں اضافے کی تجویز کرے گی۔ ذرائع کے مطابق اینٹی منی لانڈرنگ ٹاسک فورس بین الاقوامی این جی اوز کی ٹرانزیکشن کی مانیٹرنگ کرے گی۔