تازہ ترین
  • بریکنگ :- ترجمان دفترخارجہ کی صحافیوں سےغیررسمی گفتگو
  • بریکنگ :- اوآئی سی وزرائےخارجہ کونسل کااجلاس 19دسمبرکواسلام آبادمیں ہوگا،ترجمان
  • بریکنگ :- اسلامی ممالک کےوزرائےخارجہ کوشرکت کی دعوت دی گئی، ترجمان
  • بریکنگ :- اجلاس میں سلامتی کونسل کےمستقل ارکان کوشرکت کی دعوت،ترجمان
  • بریکنگ :- یورپی یونین،اقوام متحدہ اوراس کی امدادی ایجنسیوں کوشرکت کی دعوت،ترجمان
  • بریکنگ :- اجلاس میں افغانستان کااعلیٰ سطح وفدشرکت کرےگا،ترجمان
  • بریکنگ :- اوآئی سی سیکرٹریٹ کےآفیشلزاجلاس کی تیاریوں کاجائزہ لیں گے،ترجمان
  • بریکنگ :- اوآئی سی وزرائےخارجہ کاغیرمعمولی اجلاس 1980میں ہواتھا،ترجمان
  • بریکنگ :- 41سال بعدپاکستان افغانستان پراوآئی سی وزرائےخارجہ اجلاس کی میزبانی کررہاہے
  • بریکنگ :- افغانستان کوامدادنہ پہنچائی گئی تومعاشی بحران جنم لےسکتاہے، ترجمان

کورونا سے متاثرشہروں میں پابندیاں مزید سخت کی جائیں گی،پنجاب حکومت کافیصلہ

Published On 28 April,2021 08:27 pm

لاہور: (دنیا نیوز) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کے زیر صدارت ہونے والے ایک اہم اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ صوبے کے جن شہروں میں کورونا وائرس پھیلنے کی شرح زیادہ ہے، وہاں مزید سخت پابندیاں عائد کی جائیں گی۔

اس بات کی اطلاع معاون خصوصی پنجاب ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے اپنی ایک ٹویٹ کے ذریعے دی۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کی صدارت میں کورونا کی تیسری لہر سے نمٹنے کیلئے صوبائی ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں اہم فیصلے کئے گئے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ کورونا ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا جبکہ آٹھ فیصد سے زائد شرح والے شہروں میں پابندیاں مزید سخت کی جائینگی۔

ان کا کہنا تھا کہ اجلاس کے دوران بڑے شہروں میں ہسپتالوں کو کورونا کیلئے مختص کرنے کی تجویز کا جائزہ لیتے ہوئے فیصلہ کیا گیا کہ آکسیجن سپلائی بلا تعطل برقرار رکھنے کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھانے جائیں گے۔ آکسیجن سلنڈرز کی ذخیرہ اندوزی یا اورچارجنگ پر قانونی کارروائی ہوگی جبکہ بازاروں اور مارکیٹس کی بندش کے اوقات پر موثر عملدرآمد کرایا جائے گا۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ عسکری قیادت کی جانب سے سول حکومت کو بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔ عوام کی حفاظت کیلئے کئے گئے اقدامات کی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جائے گی۔ شام 6 بجے تا سحری میڈیکل سٹورز، پٹرول پمپس، ویکسینیشن سینٹرز اور دیگر ضروری سروسز کے سوا تمام کاروباری سرگرمیاں بند رہیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ فیصلوں پر عملدرآمد کیلئے مشترکہ کاوشیں بروئے کار لانے پر اتفاق کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ آزمائش کی اس گھڑی میں حکومت اور افواج پاکستان عوام کی زندگیوں کے تحفظ کیلئے ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔