تازہ ترین
  • بریکنگ :- این اے245کراچی شرقی میں ضمنی الیکشن
  • بریکنگ :- کراچی:جےیوآئی کااپناامیدوارایم کیوایم کےحق میں دستبردارکرانےکافیصلہ
  • بریکنگ :- جےیوآئی کےامین اللہ ایم کیوایم کےمعیدانورکےحق میں دستبردارہوں گے
  • بریکنگ :- کراچی:این اے245کی نشست عامرلیاقت کےانتقال کےبعدخالی ہوئی تھی
  • بریکنگ :- کراچی:این اے245کی نشست پرضمنی الیکشن 21اگست کوشیڈول ہے
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی نےاین اے245پرپہلےہی اپناامیدوارایم کیوایم کےحق میں دستبردار کرادیاہے

خیبرپختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کا شیڈول جاری

Published On 09 February,2022 06:51 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) سپریم کورٹ نے خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ موخر کرنے کا پشاور ہائیکورٹ کا حکم معطل کردیا جس کے بعد الیکشن کمیشن نے شیڈول جاری کردیا۔

الیکشن کمیشن نے سپریم کورٹ کے فیصلے کیروشنی میں خیبرپختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کے اضلاع جنوبی وزیرستان، شمالی وزیرستا، کرم، اورکزئی، ایبٹ آباد، مانسہرہ، بٹگرام، تورغر، کوہستان، کوہستان لوئر، کولاتی پلاس، سوات، شانگلہ، دیر لوئر، دیر اپر، چترال لوئر اور چترال اپر کے لیے الیکشن کا شیڈول جاری کر دیا ہے جس کے مطابق کل پبلک نوٹس جاری کر دیا جائے گا۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ بیان کے مطابق خیبرپختونخوابلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کی پولنگ31 مارچ کو ہوگی، امیدواران کے کاغذات نامزدگی چودہ فروری سے اٹھارہ فروری تک جمع کرائے جا سکیں گے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے سے قبل خیبرپختونخوا بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کی پولنگ پہلے ستائیس مارچ کو ہونا تھی۔

اس سے قبل جسٹس اعجازالاحسن اور جسٹس عائشہ ملک پر مشتمل سپریم کورٹ کے دو رکنی بنچ نے کے پی میں بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ موخر کرنے کے پشاور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف درخواست کی سماعت کی۔ سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے فریقین کو نوٹسز جاری کر دیے۔

الیکشن کمیشن کے وکیل نے کہا کہ پشاور ہائیکورٹ ایبٹ آباد بنچ نے الیکشن کمیشن کو سنے بغیر بلدیاتی انتخابات کا شیڈول موخر کر دیا، یکم فروری کی سماعت کا نوٹس دو فروری کو موصول ہوا، جو ملنے تک ہائیکورٹ بلدیاتی انتخابات موخر کر چکی تھی، ہائی کورٹ میں پانچ اضلاع کا الیکشن موخر کرنے کی درخواست دائر کی گئی تھی جس پر 18 اضلاع کا الیکشن موخر کر دیا گیا۔

شکایت کنندگان کے وکیل نے کہا کہ موسمی حالات کے پیش نظر 27 مارچ کو انتخابات نہیں ہو سکتے۔

جسٹس عائشہ ملک نے ریمارکس دیے کہ ہائیکورٹ کو فیصلے سے پہلے الیکشن کمیشن کا موقف سننا چاہیے تھا، اس بات کی تصدیق نہیں ہوئی کہ کے پی میں موسمی حالات الیکشن میں رکاوٹ ڈال سکتے ہیں۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ محکمہ موسمیات کی رپورٹ کو الیکشن کمیشن نے دیکھنا تھا عدالت نے نہیں، ہائیکورٹ کو فیصلہ دینے کی اتنی جلدی کیا تھی؟ عدالت نے کیسں کی سماعت پیر 14 فروری تک ملتوی کردی۔