تازہ ترین
  • بریکنگ :- عمران خان کےقومی اسمبلی کے 9 حلقوں سےکاغذات نامزدگی جمع
  • بریکنگ :- عمران خان بیک وقت مردان،چارسدہ،پشاور،کرم،فیصل آبادسےالیکشن لڑیں گے
  • بریکنگ :- عمران خان ننکانہ، ملیر، کورنگی اورکراچی ساؤتھ سے بھی انتخاب لڑیں گے
  • بریکنگ :- این اے 22، 24، 31اوراین اے 45 سےعمران خان کےکاغذات نامزدگی جمع
  • بریکنگ :- این اے 108، 118، 237، این اے 239 اور 246 سے بھی کاغذات جمع
  • بریکنگ :- خیبرپختونخوامیں خواتین کی مخصوص نشست کیلئےبھی کاغذات جمع
  • بریکنگ :- شاندانہ گلزارخان،روحیلہ حامد،مہوش علی نےکاغذات نامزدگی جمع کرائے
  • بریکنگ :- تمام 9 حلقوں میں امیدواروں کے کاغذات نامزدگی جمع کرانےکاعمل مکمل
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن شیڈول کےمطابق 9حلقوں میں انتخاب 25 ستمبرکوہوگا

عمران کے زیر صدارت اجلاس، پنجاب کے سیاسی معاملات پرغور، ثاقب نثار کی ملاقات

Published On 27 April,2022 06:22 pm

لاہور:(دنیا نیوز) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت اجلاس میں پنجاب کے سیاسی معاملات پر غور کیا گیا، لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے پر بریفنگ دی گئی جبکہ پی ٹی آئی چیئرمین سے سابق چیف جسٹس ثاقب نثار، پاکستان مسلم لیگ (ق) کے رہنما مونس الہٰی نے بھی ملاقات کی۔

پنجاب کے سیاسی اور آئینی بحران پر پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی زیر صدارت اجلاس کا انعقاد کیا گیا، اجلاس میں عثمان بزدار، گورنر پنجاب عمر سرفراز چیمہ، شفقت محمود، سبطین خان، میاں محمود الرشید اور ایڈووکیٹ جنرل احمد اویس نے شرکت کی۔

ایڈووکیٹ جنرل نے ہائی کورٹ کے فیصلے کے حوالے سے اجلاس کو بریفنگ دی جبکہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ گورنر پنجاب آئینی ماہرین سے مشاورت کا سلسلہ جاری رکھیں تاکہ مسلم لیگ ن کے غیر آئینی اقدامات کو روکا جاسکے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پنجاب اسمبلی میں جس طرح پولیس کو استعمال کر کے ایوان کا تقدس مجروح کیا گیا وہ شرمناک ہے، ہمارے منخرف اراکین کے خلاف ریفرنس پر بھی الیکشن کمیشن فیصلہ کیوں نہیں کر رہا۔

ادھر سابق وزیر اعظم عمران خان سے مونس الٰہی نے بھی ملاقات کی، ملاقات میں صوبے کی سیاسی، انتظامی اور اتحادی امور، لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے بعد پیدا شدہ صورتحال پر گفتگو کی گئی۔

بعدازاں سابق وزیراعظم عمران خان نے ڈاکٹر یاسمین راشد کی جانب سے انصاف پروفیشنلز فورم میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدار، شاہ محمود قریشی، شفقت محمود، عندلیب عباس و دیگر سینئر قیادت سمیت وکلاء، ڈاکٹرز، انجینئرز اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔

تمام شرکاء نے عمران خان کی قیادت پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا، عمران خان سمیت ڈاکٹر یاسمین راشد، عندلیب عباس اور اعجاز چودھری نے بھی حاضرین سے خطاب کیا۔

عمران خان سے ملاقات میں عدلیہ کی عزت کی بات کی: سابق چیف جسٹس ثاقب نثار

 جسٹس (ر) ثاقب نثار کی پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم سے ملاقات ہوئی، سابق چیف جسٹس نے کہا کہ عمران خان سے ملاقات کے دوران عدلیہ کی عزت کی بات کی۔

ذرائع کے مطابق سابق چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثار نے زمان پارک میں سابق وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی، ثاقب نثار عمران خان کی خواہش پر ان سے ملنے پہنچے، عمران خان نے ثاقب نثار کو قانونی مشوروں کے لئے بلایا تھا۔

اس حوالے سے دنیا نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے جسٹس (ر) ثاقب نثار نے کہا کہ عمران خان سے ملاقات کے دوران عدلیہ کی عزت کی بات کی، عدلیہ کی تضحیک قابل قبول نہیں ہے، عدلیہ پر تنقید نہیں ہونی چاہیے، اعلیٰ عدلیہ کے تمام ججز ایماندار اور دیانتدار ہیں، عمران خان نے میری تمام باتوں سے اتفاق کیا ہے۔

سابق چیف جسٹس پاکستان کا کہنا تھا کہ میں ریٹائرڈ آدمی ہوں کسی سے بھی مل سکتا ہوں، عمران خان نے پیغام بھجوایا کہ میں ملنا چاہتا ہوں، عمران خان نے کہا کہ عدلیہ پر تنقید سوشل میڈیا کرتا ہے، سوشل میڈیا کو ہم نہیں روک سکتے۔

 چاہتا ہوں جب کال دوں کم از کم 20 لاکھ لوگ اسلام آباد پہنچیں: عمران خان

 عمران خان نے کہا ہے کہ امریکا بوٹ پالش اور چیری بلاسم کے ذریعے ہمیں کنٹرول کرے گا، چاہتا ہوں جب کال دوں کم از کم 20 لاکھ لوگ اسلام آباد پہنچیں۔

ایوان اقبال میں ورکرز کنونشن سے عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ اپنی چوری بچانے کیلئے پورے ملک کو غلام بنا دیں گے، ملک پر سازش کے تحت امپورٹڈ حکومت مسلط کی گئی، امپورٹڈ حکومت سے امریکا ہمیں فتح کیے بغیر کنٹرول کرے گا، امریکا بوٹ پالش اور چیری بلاسم کے ذریعے ہمیں کنٹرول کرے گا، امریکا کی جنگ میں ہمارے 80 ہزار افراد مارے گئے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے بہترین حکمت عملی کے ذریعے کورونا کا مقابلہ کیا، مشرف دور میں بیرونی قرض 2 یا 3 ارب ڈالر بڑھا، ان کے دور میں 50 ہزار ارب ڈالر بیرونی قرضے میں اضافہ ہوا، شہباز شریف پر ایف آئی اے میں کرپشن کے کیسز ہیں، مشرف نے امریکا کے دباؤ میں انہیں این آر او دیا، یہ این آر او ٹو لیں گے تو انصاف کے نظام کی قبر کھو دی جائے گی۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ شہباز شریف نے وزارت عظمیٰ سنبھالتے ہی ایف آئی اے میں تبادلے کیے، شہباز شریف اب اپنے کیسز ختم کرائیں گے، یہ صفائی کر کے پھر سے لوٹ مار شروع کریں گے، نیب، عدالتیں صرف چھوٹے چھوٹے چوروں کو پکڑیں گی، طاقتور چوروں کو ہمارا نظام نہیں پکڑ سکے گا۔ چیف الیکشن کمشنر ن لیگ کا ایجنٹ ہے۔