تازہ ترین
  • بریکنگ :- کراچی: بلدیاتی قانون پر جماعت اسلامی اور سندھ حکومت کے مذاکرات کامیاب
  • بریکنگ :- سندھ حکومت اور جماعت اسلامی کےدرمیان تحریری معاہدہ
  • بریکنگ :- جماعت اسلامی کا دھرنا ختم کرنے کا اعلان،کارکنان گھروں کو روانہ
  • بریکنگ :- پیپلز پارٹی اور جماعت اسلامی میئر کراچی کو بااختیار بنانےپر متفق
  • بریکنگ :- آپ کو تاریخی جدوجہد کرنے پرمبارکباد پیش کرتا ہوں،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آپ نے ساڑھے تین کروڑ عوام ہی نہیں پورے ملک کو حیران کردیا،حافظ نعیم
  • بریکنگ :- ہم استقامت کے ساتھ 29 دن دھرنے پر بیٹھے رہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:سندھ حکومت اور جماعت اسلامی نے مل کر ایک مسودہ بنایا ہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:2021 کا ترمیمی بل اب ختم ہو جائےگا،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آج میڈیا کے سامنے وزیر بلدیات نے ہمارے مطالبات تسلیم کیے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- ہم اس معاہدے پر عمل بھی کروائیں گے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:صوبائی فنانس کمیشن کے قیام پر رضامندہیں،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- مئیر اور ٹاؤن چیئرمین کمیشن کے ممبر ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- سندھ حکومت تعلیمی ادارے اور اسپتال بلدیہ کو واپس کرنے پر تیار،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- آکٹرائے اور موٹر وہیکل ٹیکس میں سےبھی بلدیہ کراچی کو حصہ ملے گا،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- کراچی: مئیر کراچی واٹر بورڈ کے چیئرمین ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- بلدیہ کو خود مختار بنانے کیلئےمالی وسائل دینےپر سندھ حکومت تیار، ناصر حسین

خیبر پی کے میں زمینوں کا 65 فیصد ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کر دیا گیا

Published On 01 December,2021 09:14 am

پشاور: (دنیا نیوز) خیبرپختونخوا میں زمینوں کا 65 فیصد ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کردیا گیا، پشاورمیں 200 سے زائد موضع جات میں سے114 کا ریکارڈ بھی آن لائن کردیا گیا ہے، شہری کہتے ہیں حکومت مشکلات کے خاتمے کےلیے مزید اقدامات اٹھائے۔

خیبرپختونخوا میں اب عوام ایک ہی چھت کے نیچے فردات، انتقالات، انتقال کی تصدیق، ریکارڈ کی درستگی، رجسٹری اندراج اور دیگر سہولیات حاصل کر سکیں گے اور اب مہینوں کا کام گھنٹوں میں ہونا ممکن ہوسکے گا۔

صوبے میں زمینوں کا 65 فیصد ریکارڈ کمپیوٹرائزد کردیا گیا ہے اور باقی ریکارڈ 2022 کے آخر تک کمپیوٹرائزد کر دیا جائے گا،2 ہزار کے قریب موضع جات کو کمپیوٹرائزڈ کیا گیا ہے، سینیئر ممبر بورڈ آف ریونیو کہتے ہیں صوبے میں 30 سروس ڈیلیوری سنٹروں نے کام شروع کردیا ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ زمینوں سے متعلق درپیش مسائل کے حل سمیت انتقال اور فرد نمبر حاصل کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے، حکومت کو اس سلسلے میں مزید اقدامات بھی اٹھانے چاہئیں۔

محکمہ بورڈ آف ریونیو کی جانب سے صوبائی دارالحکومت پشاور میں 203 موضع جات میں سے 114 کو کمپیوٹرائزڈ کرکے عوام کے لیے لائیو کر دیا گیا ہے۔