تازہ ترین
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 269 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 44 ہزار 831 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 720 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 1.60 فیصدرہی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 17 اموات

لاک ڈاؤن ختم: دو ماہ بعد گدھے سے ملنے والا مالک جذباتی ہو کر رو پڑا

Last Updated On 27 May,2020 12:14 pm

میڈرڈ: (دنیا نیوز) دنیا بھر میں انسانوں اور جانوروں کی انسیت کے حوالے سے بہت ساری خبریں پڑھنے کو ملتی رہتی ہیں، تاہم کچھ ایسی خبریں سامنے آتی ہیں جو سب کو ورطہ حیرت میں ڈال دیتی ہیں، اسی طرح کی ایک خبر سپین سے آئی ہے جہاں پر دو ماہ سے زائد عرصہ کے بعد گدھے سے ملنے والا نوجوان جذباتی ہو کر رو پڑا۔

تفصیلات کے مطابق دسمبر 2019 سے چین کے شہر ووہان سے پھیلنے والے کورونا وائرس نے جہاں 21 مئی کی شام تک دنیا بھر میں 50 لاکھ افراد کو متاثر کیا تھا، وہیں اس وبا نے 3 لاکھ 25 ہزار سے زائد انسانوں کی زندگی بھی چین لی تھی۔

کورونا وائرس کے پھیلاؤ سے بچنے کے لیے دنیا کے دو سو زائد ممالک نے کم از کم اڑھائی سے 3 ماہ تک سخت لاک ڈاؤن نافذ کر رکھا تھا، تاہم رواں ماہ مئی کے آغاز میں ہی کئی ممالک نے لاک ڈاؤن میں نرمیاں کرنا شروع کردی تھیں۔

لاک ڈاؤن میں نرمیاں کرنے والے ممالک میں یورپی ملک سپین بھی شامل ہے، جہاں پر 21 مئی کی شام تک کورونا سے 2 لاکھ 32 ہزار انسان متاثر جبکہ 27 ہزار 888 افراد ہلاک ہوچکے تھے۔

سپین کی حکومت نے مئی کے آغاز میں ہی لاک ڈاؤن کو نرم کرنا شروع کردیا تھا اور لوگوں کو سخت احتیاطی تدابیر کے تحت سرگرمیاں سر انجام دینے کی اجازت دی تھی۔

تقریبا اڑھائی سے 3 ماہ تک مکمل لاک ڈاؤن رہنے کی وجہ سے سپین میں لاکھوں لوگ ایک ہی جگہ پھنس گئے تھے اور کچھ افراد اپنے گھروں سے دور رہنے پر بھی مجبور تھے۔

گھروں سے دور رہنے والے افراد لاک ڈاؤن نرم ہونے کے بعد جب چند ہفتوں بعد گھر لوٹے تو وہ اپنے گھر، اہل محلہ، درختوں اور جانوروں کو دیکھ کر جذباتی ہوگئے اور ایسے افراد میں جنوبی سپین کے ایک 38 سالہ شخص بھی ہیں جو 2 ماہ بعد اپنے گدھے سے ملنے کے بعد جذباتی ہوگئے۔

سپینش ریڈیو سٹیشن کے مطابق جنوبی سپین کے علاقے اندالوسیا کے 38 سالہ اسماعیل فرنانڈز جب 2 ماہ کے طویل عرصے بعد گھر لوٹے تو اپنے گدھے سے گلے مل کر جذباتی ہوگئے اور پھوٹ پھوٹ کر رونے لگے۔

اسماعیل فرنانڈز ملک میں اچانک لاک ڈاؤن نافذ کیے جانے کے بعد گھر سے دور پھنس گئے تھے اور وہ تقریبا 10 ہفتوں تک گھر سے دور رہے ہیں اور اس دوران انہیں قرنطینہ میں بھی اپنے گدھے کی فکر تھی۔

تاہم لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد جب وہ گھر پہنچے تو وہ سب سے زیادہ جذباتی انداز میں اپنے گدھے سے ملے اور ان سے گلے مل کر پھوٹ پھوٹ کر رونے لگے۔

رپورٹ کے مطابق اسماعیل فرنانڈز نے بتایا کہ جب وہ گھر پہنچے تو انہوں نے گدھے کو آوازیں دینا شروع کیں اور دور سے جب ان کی نظر اپنے پیارے گدھے پر پڑی تو ابتدائی طور پر وہ اسے پہچان نہیں سکے لیکن گدھے نے انہیں پہچان لیا تھا۔

تقریباً اڑھائی ماہ بعد اپنے گدھے سے جذباتی انداز میں ملنے کی ویڈیو کو اسماعیل فرنانڈز نے اپنے فیس بک پر شیئر کیا جو دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی اور دنیا بھر کے نشریاتی اداروں نے اس پر خبریں بنائیں۔ ویڈیو میں اسماعیل فرنانڈز کو اسپینش زبان میں بڑے رومانوی اور دردناک انداز مین اپنے گدھے کو بلاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

ویڈیو میں گدھے کے مالک کو اپنے گدھے سے جذباتی انداز میں گلے ملتے ہوئے اور ان سے شکوے کرتے ہوئے دیکھا اور سنا جا سکتا ہے۔ اسماعیل فرنانڈز نے اپنے گدھے کے ساتھ سیلفی کو بھی فیس بک پر شیئر کیا اور اس سے محبت کا اظہار کیا۔