تازہ ترین
  • بریکنگ :- پی ڈی ایم تھکے ہوئے پہلوانوں کا اجتماع ہے،فواد چودھری
  • بریکنگ :- پنجاب کابلدیاتی ایکٹ چندروزمیں منظورہوجائےگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پنجاب میں ویلج کونسل کانیااسٹرکچرآئےگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بلدیاتی الیکشن ای وی ایم کےذریعےہوں گے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن درست طریقےسےآگےبڑھ رہاہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- حکومت الیکشن کمیشن کوہرممکن مددفراہم کرےگی،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ایسانہیں کہ ای وی ایم بہت مہنگی ہوگی ،وفاقی وزیراطلاعات
  • بریکنگ :- ای وی ایم ایک ہی بارخریدی جائیں گی باربارنہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- سندھ حکومت ہمیشہ معاملات خراب کرنےکاکرداراداکرتی ہے،فواد چودھری
  • بریکنگ :- سندھ حکومت ہیلتھ کارڈکےمعاملےپرپریشان ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ہیلتھ کارڈکی فراہمی سےوزرانہیں عام آدمی کوفائدہ ہوگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- الیکشن مہنگےنہیں ہوں گے،معمول کےاخراجات آئیں گے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- مہنگائی میں کمی آرہی ہے،وزیراطلاعات فواد چودھری
  • بریکنگ :- مسلم لیگ(ن)،پیپلزپارٹی کی کرتوتوں کی وجہ سےایسےحالات ہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- شاہدخاقان عباسی کوکہتاہوں کہ اعدادوشمارپڑھ لیاکریں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن نہیں چاہتی الیکشن نظام میں اصلاحات لائی جائیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن کوپہلےدن سےانتخابی اصلاحات پربلارہےہیں،فوادچودھری

نسل پرستانہ رویے کا الزام،سابق انگلش کپتان مائیکل وان ایشز کمنٹری پینل سے باہر

Published On 24 November,2021 11:23 pm

لندن:(ویب ڈیسک) نسل پرستانہ رویے کے الزام پر انگلش کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مائیکل وان کو ایشز سیریز کے کمنٹری پینل سے باہر کردیا گیا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق مائیکل وان کو آسٹریلیا میں شیڈول تاریخی سیریز میں کمنٹری کرنے سے روک دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ یارکشائر کے سابق کھلاڑی عظیم رفیق نے کہا تھا کہ انگلش کرکٹ میں ’ادارے کی سطح پر‘ نسل پرستی موجود ہے۔

30 سالہ رفیق نے برطانوی پارلیمان کی ڈیجیٹل، کلچر، میڈیا اور سپورٹ کی قائمہ کمیٹی کو بتایا تھا کہ ان کے یارکشائر کلب کے دور میں نسل پرستانہ جملوں کا باقاعدہ استعمال ہوتا تھا۔

عظیم رفیق نے الزام لگایا تھا کہ مائیکل وان نے 2009 میں ایک میچ سے قبل انہیں اور ایشیائی نژاد دو دیگر کھلاڑیوں سے کہا کہ آپ میں سے بہت زیادہ لوگ ہیں، ہمیں اس کے بارے میں کچھ کرنے کی ضرورت ہے جبکہ وان نے اس الزام کی سختی سے تردید کی تھی۔

برطانوی نشریاتی ادارے کی جانب سے کہا گیا کہ ادارتی وجوہات کی بناء پر ہم نہیں سمجھتے کہ وان کے لیے اس وقت ہماری ایشز ٹیم یا اس کھیل کی وسیع تر کوریج میں کوئی کردار ادا کرنا مناسب ہوگا۔