تازہ ترین
  • بریکنگ :- کراچی:رہنما ایم کیوایم وسیم اخترکی میڈیا سے گفتگو
  • بریکنگ :- بلدیاتی بل میں ترمیم سےپہلےمشاورت کرنی چاہیےتھی،وسیم اختر
  • بریکنگ :- کراچی:وزرابیانات دےکرتوجہ ہٹاناچاہتےہیں،وسیم اختر
  • بریکنگ :- مسائل حل نہ کیےتوتمام جماعتیں آئندہ کالائحہ عمل طےکریں گی،وسیم اختر
  • بریکنگ :- آل پارٹیزکانفرنس میں متفقہ اعلامیہ جاری کریں گے،رہنما ایم کیوایم محمد حسین
  • بریکنگ :- مرتضیٰ وہاب،سعیدغنی کی دھمکیوں سےنہیں گھبرائیں گے،محمد حسین

چنیوٹ میں 7 سالہ بچی کا دلخراش قتل، پوسٹ مارٹم رپورٹ میں زیادتی ثابت

Published On 09 September,2021 08:56 pm

چنیوٹ: (دنیا نیوز) نواحی علاقے چک نمبر 243 صابوآنہ میں چار روز قبل لاپتا ہونے والی 7 سالہ معصوم بچی اقصیٰ بی بی کے قتل کا دلخراش واقعہ، پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بچی کے ساتھ زیادتی کی تصدیق ہو گئی۔

پولیس ترجمان کا کہنا ہے کہ بچی کو تیز دھار آلے کے ساتھ قتل کیا گیا ہے۔ لنگرانہ پولیس نے ایف آئی آر میں زیادتی کی دفعہ (376 ضمن 3) گینگ ریپ شامل کر لی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ نمونے فرانزک لیب کو بھجوا دئیے گئے ہیں، مزید تفصیلات فرانزک رپورٹ آنے بعد پتا چلیں گئی۔

مقتولہ لے لواحقین کا کہنا ہے کہ اقصیٰ چار روز قبل گھر سے لاپتا ہوئی تھی، کافی تلاش کے بعد جب نہ ملی تو ریسکیو 1122 کو کال کی گئی جنہوں نے نہر سے تلاش کیا لیکن کافی تگ ودو کے بعد اس کی لاش کماد کی فصل سے برآمد ہوئی۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ وقوعہ کی تفتیش جاری ہے، جلد ملزمان تک پہنچ جائیں گئے، مزید انویسٹی گیشن اور ملزمان کو پکڑنے کے لیے ایس پی انویسٹی گیشن کی زیر نگرانی ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں۔

بچی کے ساتھ زیادتی اور قتل کے بعد علاقے کی فضا سوگوار ہے۔ متاثرہ خاندان نے آئی جی پنجاب، وزیراعلیٰ پنجاب، وزیراعظم اور چیف جسٹس سے فوری طور پر نوٹس لے کر ملزمان کو قانون کے کٹہرے میں لانے اور قرار واقعی سزا دلوانے کا مطالبہ کیا ہے۔