تازہ ترین
  • بریکنگ :- کوئٹہ اورلسبیلہ کےعلاوہ بلوچستان کے 32اضلاع میں بلدیاتی الیکشن
  • بریکنگ :- بلدیاتی انتخابات کےلیےبیلٹ پیپرزاورانتخابی میٹریل کی ترسیل کاعمل مکمل
  • بریکنگ :- پولنگ صبح 8بجےسےشام 5بجےتک بغیرکسی وقفےکےجاری رہےگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:7 میونسپل کارپوریشن،838یونین کونسلزمیں پولنگ ہوگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:5ہزار345دیہی وارڈاور9ہزار14شہری وارڈکےلیےپولنگ ہوگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:35لاکھ52ہزار298ووٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے
  • بریکنگ :- کوئٹہ:20لاکھ 6ہزار274مرداور15لاکھ46ہزار124خواتین ووٹرزہیں
  • بریکنگ :- کوئٹہ:32اضلاع میں 5ہزار226پولنگ اسٹیشنزقائم
  • بریکنگ :- کوئٹہ:2ہزار54پولنگ اسٹیشنزانتہائی حساس،ایک ہزار974حساس قرار
  • بریکنگ :- الیکشن میں16 ہزار195امیدوارمدمقابل،102 امیدواربلامقابلہ منتخب
  • بریکنگ :- کوئٹہ:پولنگ اسٹیشنزپرپولیس،لیویزاورایف سی کےجوان تعینات ہوں گے

پاکستان میں کورونا ویکسین سے متعلق جعلی معلومات پھیلائی جانے لگیں

Published On 10 August,2021 04:27 pm

لاہور: (ویب ڈیسک) ملک بھر میں مختلف کورنا ویکسین سے متعلق جعلی معلومات پھیلائی جانے لگیں۔ این سی او سی نے عوام کو خبردار کر دیا۔

این سی او سی کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک سکرین شارٹ شیئر کیا گیا۔ اس سکرین شارٹ پر حکومت پاکستان کا لوگو لگا ہوا ہے۔سکرین شارٹ پر غلط انفارمیشن لکھا ہوا ہے۔

سکرین شارٹ پر دیکھا جا سکتا ہے کہ جس میں لکھا گیا ہے کہ مندرجہ ذیل افراد کو سائنو فارم ویکسین نہیں لگانا چاہیے۔

ایسے افراد افراد جن کی عمر 60 سال یا اس سے زیادہ ہو۔

وہ افراد جنہیں بخار ہو، (بخار ہونے کے بعد وہ افراد ویکسین لگوا سکتے ہیں۔

وہ افراد جو آئسولیشن کی مدت میں ہوں ، آئسولیشن کی مدت پوری ہونے کے بعد وہ افراد ویکسین لگوا سکتے ہیں۔

وہ افراد جو قلیل مدتی مدافعتی دوائیں استعمال کر رہے ہوں وہ دوا ختم ہونے کے 28 دنوں بعد ویکسین لگوا سکتے ہیں۔

وہ افراد جنہوں نے کوئی پیوند کاری کروائی ہو( وہ پیوند کاری کے تین ماہ بعد ویکسین لگوا سکتے ہیں)

وہ افراد جنہوں نے کیمرتھراپی کروائی ہو۔ (وہ کیمر تھراپی کے 28 دنوں کے بعد ویکسین لگوا سکتے ہیں)

حاملہ خواتین یہ ویکسین نہیں لگوا سکتیں۔

دودھ پلانے والی مائیں یہ ویکسین نہیں لگوا سکتیں۔

دل کے امراض اور سانس کی بیماری میں مبتلا افراد ویکسین نہیں لگوا سکتے۔