تازہ ترین
  • بریکنگ :- فیٹف نےحالیہ اجلاس میں پاکستان کی کارکردگی کاجائزہ لیا ،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- فیٹف نےپاکستان کی نمایاں پیشرفت کوسراہا،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- پاکستان نے2021ایکشن پلان کے7میں سے 4نکات پرعملدرآمد کرلیا،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- پاکستان نےمقررہ مدت سےپہلےخاطرخواہ پیشرفت کی،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- فیٹف پاکستان کااگلاریویوفروری2022 میں کرےگا،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- پاکستانی وفدکی سربراہی وزیرتوانائی محمدحماداظہرنےکی،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- پاکستان دونوں ایکشن پلانزکےاہداف کےحصول کیلئےپرعزم ہے،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- فیٹف کاتمام ایکشن پلانزپرپاکستان کے عملدرآمدپراطمینان کااظہار،وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- فیٹف کوایکشن پلانزکےبارےمیں جامع رپورٹ پیش کردی گئی،وزارت خزانہ

کورونا وائرس پھیلاؤ کا خطرہ، بلوچستان میں مکمل لاک ڈاؤن اور کرفیو نافذ کرنے کا مشورہ

Last Updated On 28 May,2020 09:14 pm

کوئٹہ: (دنیا نیوز) کورونا وائرس پھیلاؤ کے خطرے کے پیش نظر محکمہ صحت بلوچستان نے صوبائی حکومت کو مکمل لاک ڈاؤن اور کرفیو کے نفاذ کی سفارش کر دی ہے۔

ذرائع کے مطابق سیکرٹری صحت بلوچستان دوستین خان جمالدینی کے زیر صدارت طبی ماہرین اور ڈاکٹرز کے اجلاس میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔

اجلاس میں محکمہ صحت نے عوامی مشکلات کے مدنظر ہسپتالوں میں محدود سطح پر او پی ڈیز کھولنے کا فیصلہ کیا۔ شعبہ حادثات میں ہر شعبے کے سٹوڈنٹس اور آن کال پروفیسر مریضوں کا معائنہ کریں گے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ الیکٹیو سرجری اور دیگر امراض میں مبتلا مریضوں کے وارڈ میں داخلے پر بدستور پابندی برقرار رہے گی۔ جون کے ابتدائی چار ہفتے صورتحال کا جائزہ لے کر او پی ڈیز کو معمول کے مطابق کھولنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔