تازہ ترین
  • بریکنگ :- سندھ حکومت اور جماعت اسلامی کےدرمیان تحریری معاہدہ
  • بریکنگ :- جماعت اسلامی کا دھرنا ختم کرنے کا اعلان،کارکنان گھروں کو روانہ
  • بریکنگ :- کراچی: آج کے اعلان کیے گئے دھرنے بھی ختم کر دیئے ہیں،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آپ کو تاریخی جدوجہد کرنے پرمبارکباد پیش کرتا ہوں،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آپ نے ساڑھے تین کروڑ عوام ہی نہیں پورے ملک کو حیران کردیا،حافظ نعیم
  • بریکنگ :- ہم استقامت کے ساتھ 29 دن دھرنے پر بیٹھے رہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:سندھ حکومت اور جماعت اسلامی نے مل کر ایک مسودہ بنایا ہے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:2021 کا ترمیمی بل اب ختم ہو جائےگا،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- آج میڈیا کے سامنے وزیر بلدیات نے ہمارے مطالبات تسلیم کیے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- ہم اس معاہدے پر عمل بھی کروائیں گے،حافظ نعیم الرحمان
  • بریکنگ :- کراچی:صوبائی فنانس کمیشن کے قیام پر رضامندہیں،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- کراچی: بلدیاتی قانون پر جماعت اسلامی اور سندھ حکومت کے مذاکرات کامیاب
  • بریکنگ :- مئیر اور ٹاؤن چیئرمین کمیشن کے ممبر ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- سندھ حکومت تعلیمی ادارے اور اسپتال بلدیہ کو واپس کرنے پر تیار،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- آکٹرائے اور موٹر وہیکل ٹیکس میں سےبھی بلدیہ کراچی کو حصہ ملے گا،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- کراچی: مئیر کراچی واٹر بورڈ کے چیئرمین ہوں گے،ناصر حسین شاہ
  • بریکنگ :- بلدیہ کو خود مختار بنانے کیلئےمالی وسائل دینےپر سندھ حکومت تیار، ناصر حسین

حکومت آرڈیننس کے ذریعے فیٹف قوانین نافذ کر سکتی ہے: وفاقی وزیر فواد چودھری

Last Updated On 28 July,2020 11:28 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر فواد چودھری نے کہا ہے کہ آرڈیننس سے منظور فیٹف قوانین چھ ماہ چلیں گے، حکومت اس دوران اپوزیشن سے بات کر سکتی ہے۔

دنیا نیوز کے پروگرام ‘’دنیا کامران خان کیساتھ’’ میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت اور اپوزیشن میں اشتراکی عمل کا قائل ہوں۔ نیب قوانین میں تبدیلیوں کی ضرورت ہے۔ ٹیکس کے معاملات نیب کے اختیار سے نکلنا چاہیں۔

فواد چودھری نے کہا کہ اپوزیشن کے تمام تر مذاکرات کا مقصد یہ ہے کہ ان کی لیڈرشپ کے خلاف کیسز کو ختم کر دیا جائے۔ اپوزیشن چاہتی ہے کہ احتساب ختم کر دیں، لیکن ہم ایسا نہیں کر سکتے۔

یہ بھی پڑھیں: نیب مقدمات کا سامنا کرنے والے اراکین کمیٹی سے الگ ہو جائیں، فواد چودھری کی تجویز

اس سے قبل اپنے ایک بیان میں فواد چودھری نے تجویز دی تھی کہ نیب قوانین میں ترمیم کے لئے کمیٹی میں شامل وہ رہنما جن کے نیب میں کیسز چل رہے ہیں، وہ کمیٹی سے الگ ہو جائیں۔

انہوں نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ‏وہ تمام اراکین اسمبلی جو نیب کے مقدمات کا سامنا کر رہے ہیں، اگر خود نیب کے قانون میں ترامیم کرنے بیٹھ جائینگے تو ایسی ترامیم کا کیا بھرم رہ جائیگا؟

ان کے خیال میں وہ اراکین جو نیب کے مقدمات کا سامنا کر رہے ہیں، ان کو ازخود کمیٹی سے علیحدہ ہو جانا چاہیے اور پارلیمان کی عزت کا خیال رکھنا چاہیے۔