تازہ ترین
  • بریکنگ :- چھوٹےبھائی وجاہت حسین نےگھرمیں لوگوں سےچندباتیں کی ہیں،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- چودھری وجاہت نےآصف زرداری سےمتعلق الزام تراشی کی،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- چودھری وجاہت نےیہ کہاہےتونہایت بیہودہ باتیں ہیں،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- وجاہت حسین نےکہاطارق بشیرچیمہ نےہمارےخاندان کوتقسیم کردیا،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- طارق بشیرچیمہ سےمتعلق بیان جھوٹ پرمبنی ہے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- الزام لگایامیرےبیٹےمانگےتانگےکےوزیرہیں،ان کا کوئی حلقہ نہیں ،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- ان باتوں کاجواب کسی وقت گجرات جا کردوں گا ،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- میرےبیٹوں پرالزام لگایا کہ انہوں نےڈالر مانگے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- میں نےبیٹوں کی ایسی تربیت نہیں کی،چودھری شجاعت حسین
  • بریکنگ :- میرے کہنے پر بچے فی الحال خاموش ہیں، چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- بیٹوں کوتلقین کی ہےہمیشہ سچ بولنااوروعدےکاپاس رکھناہے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- میرےکہنےپراپوزیشن کےمتفقہ امیدوارشہبازشریف کوووٹ ڈالاتھا،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- ہم نےکسی سےکوئی وزارت نہیں مانگی،چودھری شجاعت حسین
  • بریکنگ :- آصف زرداری نے خود آکرہمیں مبارکباد دی تھی،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- وجاہت حسین نےکہا(ن)لیگ سےاتحادختم نہ کیاتونئی جماعت بنالیں گے،چودھری شجاعت
  • بریکنگ :- سیکڑوں پارٹیاں ہیں،ایک اوربن گئی توکیا فرق پڑےگا،چودھری شجاعت

حفیظ شیخ بھی وفاقی وزیر بن گئے، ایوان صدر میں حلف برداری کی تقریب

Published On 11 December,2020 11:35 am

اسلام آباد: (دنیا نیوز) حفیظ شیخ کو وفاقی وزیر بنا دیا گیا، ایوان صدر میں حلف برداری تقریب ہوئی۔ حکومتی مشیروں کی کابینہ کمیٹیوں میں شمولیت سے متعلق عدالتی فیصلے کے بعد عہدہ دیا گیا۔

یاد رہے اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیر اعظم کے مشیران اور معاونین خصوصی کیسز کا تفصیلی فیصلہ جاری کیا تھا جس میں قرار دیا گیا کہ مشیر یا معاون خصوصی کابینہ کا رکن نہیں، اس لیے اجلاس میں شرکت نہیں کرسکتا۔

23 صفحات پر مشتمل تفصیلی فیصلے میں کہا گیا کہ وزیراعظم کے معاونین خصوصی کابینہ کا حصہ ہیں نہ ہی کارروائی میں شامل ہوسکتے ہیں، وزیر اعظم کا معاونین خصوصی کا تقرر آئین و قانون کی خلاف ورزی نہیں لیکن وزیر اعظم کے معاونین خصوصی وفاقی وزیر ہیں نہ ہی وزیر مملکت، وزیر اعظم کے معاونین خصوصی صرف مراعات سے مستفید ہوسکتے ہیں، وزیر اعظم کے معاونین خصوصی کے پاس کوئی ایگزیکٹو اتھارٹی ہے نہ ہی پارلیمنٹ سے خطاب کرسکتے ہیں۔

فیصلے میں مزید کہا گیا کہ مشیر ایک آئینی عہدہ ہے جس کی تعداد صرف پانچ ہوگی تاہم مشیروں کو وفاقی وزیر کا درجہ دینا صرف مراعات کے لیے ہے، وزیر اعظم کا مشیر کابینہ کمیٹی کا رکن یا سربراہ بھی نہیں ہوسکتا، عدالت نے وزیر اعظم کے مشیر حفیظ شیخ، عبدالرزاق داؤد اور عشرت حسین کی کابینہ کمیٹی میں شمولیت کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کالعدم قرار دیا تھا۔