تازہ ترین
  • بریکنگ :- جہلم:اپوزیشن اصل میں بونوں پرمشتمل ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- فوادچودھری کابلاول کوکراچی،مریم نوازکومیئرلاہورکاالیکشن لڑنےکامشورہ
  • بریکنگ :- بلاول اورمریم نوازکا قد نہیں کہ خود کو قومی رہنماکہہ سکیں،فواد چودھری
  • بریکنگ :- یہ حکومت گرانے کی ساتویں کوشش کررہے ہیں،فواد چودھری
  • بریکنگ :- نوازشریف اینڈکمپنی نےملکی معیشت کابیڑاغرق کیا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- نوازشریف اینڈکمپنی کاکیاگیاکباڑذہنوں سےنہیں نکل سکتا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- تمام سیاسی جماعتیں عمران خان کےآگےڈھیرہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- یہ ملک مریم اوربلاول کےحوالےنہیں کیاجاسکتا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن جماعتوں کی پارلیمان کےاندراورباہرکوئی قدرنہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بلاول اورمریم کوچاہیےنچلی سطح سےاوپرآنےکی کوشش کریں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ان کاانحصارفضل الرحمان کےمدرسوں کےبچوں پرہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- شریف فیملی کےماہانہ اخراجات کروڑوں روپےہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- لوگ لندن فلیٹس میں ہی نوازشریف سےملاقاتوں کیلئےجاتےہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- نوازشریف کےویزےمیں توسیع مشکل ہے،اسی لیےواپسی کاکہہ رہےہیں،فوادچودھری

قوم چیئرمین سینیٹ انتخاب کےلیے شو آف ہینڈز کا انتظار کررہی ہے: مریم نواز

Published On 08 March,2021 10:29 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ قوم چیئرمین سینیٹ انتخاب کےلیے شو آف ہینڈز کا انتظار کررہی ہے، صادق سنجرانی کی جیت کامطلب انتخاب میں پیسہ چلا، حکومت بتائے چیئرمین سینیٹ کےلیے امیدوار کس بنیاد پر کھڑا کیاہے، چیئرمین سینیٹ کے لیے حکومت کے پاس عددی اکثریت نہیں۔

پی ڈی ایم رہنماؤں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ یوسف رضا گیلانی کے الیکشن کے بعد سینیٹ میں پیسے چلنے کے بھاشن سنیں، اب قوم انتظارکررہی ہے کہ کب اوپن بیلٹ سے الیکشن ہوگا۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ حکومت کے پاس چیئرمین سینیٹ کے لیے مطلوبہ تعداد نہیں ہے، حکومت نے کس بنیاد پراپنا امیدوارکھڑا کیا ہے؟ حکومت کے امیدوارکے کامیاب ہونے کی وجوہات پیسے سے خریدوفروخت ہمارے لوگوں کو توڑا جائے گا، فون کالزبھی لوگوں کوآنا شروع ہوگئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 2018کےبعد پنجاب میں حکومت بنانا ن لیگ کا حق تھا، پنجاب میں تبدیلی کے لیے پی ڈی ایم مل کر غور کر ے گی۔ پنجاب میں تحریک انصاف کے ارکان اسمبلی ہم سے رابطے میں ہیں۔ 2018میں بدترین دھاندلی کے باوجود پنجاب میں مسلم لیگ ن جیت گئی۔

 ن لیگ کی نائب صدر نے کہا کہ بہت سے حکومتی ارکان اب بھی ہمارے ساتھ ہیں، یہ سب سامنے رکھ کر پنجاب میں عدم اعتماد کی تحریک لانے یا نہ لانے کا فیصلہ کریں گے۔ پنجاب میں تحریک اعتماد لاکر پھر انہیں کا وزیر اعلیٰ لانا عقلمندی نہیں، پنجاب میں ہماری حکومت رہی ہے، ہم چاہیں گے آئندہ بھی پنجاب میں مسلم لیگ ن کی حکومت ہو۔