تازہ ترین
  • بریکنگ :- متعلقہ شہری سےرابطہ اورمجازافسرکی رائےلازمی قرار،وزیراعظم آفس
  • بریکنگ :- پہلےمرحلےمیں جائیداد کےتنازعات، امن و امان کی شکایات کاجائزہ لیاجائےگا
  • بریکنگ :- انسانی حقوق سے متعلق شکایات کو بھی دوبارہ کھولاجائےگا،وزیراعظم آفس
  • بریکنگ :- وفاقی اداروں کی 68 ہزار، پنجاب کی53ہزار شکایات پر نظر ثانی ہوگی
  • بریکنگ :- پاکستان سٹیزن پورٹل، عوام کو ریلیف نہ ملنے پر وزیر اعظم کا ایکشن
  • بریکنگ :- وزیراعظم کاایک لاکھ 55ہزار شکایات پرنظر ثانی کا حکم
  • بریکنگ :- غیرمطمئن شہریوں کی شکایات کو دوبارہ کھولا جائے،وزیراعظم کی ہدایت
  • بریکنگ :- وزیراعظم کی ہدایات پر شکایات کو مرحلہ وار کھولا جائے گا،وزیراعظم آفس
  • بریکنگ :- نظرثانی کیلئےشکایات اعلیٰ افسران کو تفویض،وزیراعظم آفس

چھتری بردار کو ساتھ کر لیکر روسی ہم منصب کا استقبال، شاہ محمود شدید تنقید کی زد میں آ گئے

Published On 06 April,2021 10:38 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود چھتری بردار کو ساتھ لے کر روسی ہم منصب کے استقبال کے لیے پہنچ گئے، سوشل میڈیا پر وڈیرہ شاہی انداز کے باعث شدید تنقید کی زد میں آگئے۔

تفصیلات کے مطابق ملک کی نمائندگی کے لیے ہر دم تیار لیکن اپنی چھتری خود اٹھانے میں عار، روسی ہم منصب کے استقبال کے لیے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی ائیرپورٹ پہنچے تو چھتری بردار خدمتگار بھی ہمراہ تھا، روسی ہم منصب جہاز سے اترے تو اپنی چھتری خود تھام رکھی تھی۔

وزیر خارجہ کا وڈیرہ شاہی انداز عوام کو ایک آنکھ نہ بھایا، سوشل میڈیا پر شاہ محمود قریشی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

سوشل میڈیا صارفین کا کہنا ہے کہ روس جیسی سپر پاور کا وزیر خارجہ اپنی چھتری خود اٹھا سکتا ہے تو پاکستانی وزیر خارجہ کیوں نہیں۔