تازہ ترین
  • بریکنگ :- پشاور:نئی نسل کومنصوبے کےتحت گمراہ کیاگیا،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:دہشتگردی پھرسراٹھارہی ہے،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:بجٹ بھونڈےاندازسےپیش کیاگیا،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:پارلیمنٹ کی توہین اورتضحیک کی گئی،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- شہبازشریف کی جانب سےاےپی سی کی تجویزکی تائیدکرتےہیں،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشتون بیلٹ میں مذہب کی جڑیں گہری ہیں،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- ان کےکردارکی وجہ سےپختونوں کی روایات پامال ہورہی ہیں،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- ایک بارپھرعوامی صفوں کومنظم کیاجائےگا،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:کشمیرہمارےہاتھوں سےنکل چکاہے،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- کس سےبیٹھ کربات کریں،کوئی اس قابل توہو،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- بجٹ جھوٹ کاپلندہ تھا،حکومت نےہلڑبازی کاسہارالیا،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:حکومت کےبرقراررہنےکاکوئی جوازنہیں،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- ہم کشمیریوں اورفلسطینیوں کواکیلانہیں چھوڑسکتے،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- ہلڑبازی کاسلسلہ اب بلوچستان پہنچ گیاہے،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- بلوچستان میں بکتربندگاڑیوں سےاسمبلی کےدروازےتوڑےگئے،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- دھاندلی سےپیداحکومتیں یہی کرداراداکرسکتی ہیں،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- دھاندلی کرکےنااہل لوگوں کوپارلیمنٹ میں بٹھادیاگیا،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:4 جولائی کوسوات میں تاریخی اجتماع ہوگا،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- 29 جولائی کوکراچی میں پی ڈی ایم کابڑااجتماع ہوگا،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- تلخی کےماحول میں پارلیمنٹ نہیں چل سکتی،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- پشاور:پی ڈی ایم اپنےمؤقف پرقائم ہے،مولانافضل الرحمان

بشیر میمن کو اپنے بھونڈے الزامات ثابت کرنا ہونگے، وزیر اطلاعات فواد چودھری

Published On 28 April,2021 10:36 pm

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی کسی سے ذاتی دشمنی نہیں، یہ ہو ہی نہیں سکتا کہ وہ کسی کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا کہیں، بشیر میمن کو اپنے بھونڈے الزامات ثابت کرنا ہونگے۔

فواد چودھری کا کہنا ہے کہ بشیر میمن ایک ریٹائرڈ افسر ہیں، انھیں عہدے سے ہٹائے جانے کا غصہ ہو سکتا ہے، انہوں نے بے بنیاد الزامات لگائے۔ شہزاد اکبر اور فروغ نسیم نے ان کو لیگل نوٹس جاری کر دیا ہے۔

دنیا نیوز کے پروگرام دنیا کامران خان کیساتھ میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے سوال اٹھایا کہ اگر کیس ہی بنوانے تھے تو نئے ڈی جی نے کیوں نہیں بنائے؟

ان کا کہنا تھا کہ عدلیہ اور حکومت نے آئینی حدود میں رہ کر کام کرنا ہے، اس سے تجاوز کیا گیا تو معاملات خراب ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ میرا ذاتی خیال ہے کہ بشیر میمن کی اتنی حیثیت نہیں کہ حکومت اس پر موقف دے۔ ایک جج پر الزام لگے ہم نے کیس متعلقہ فورم کو بھجوا دیا تھا۔