تازہ ترین
  • National :- نیب نےپاکستان ٹریننگ اینڈریسرچ اکیڈمی قائم کی ہے،چیئرمین نیب
  • National :- اکیڈمی میں انویسٹی گیشن افسران،پراسیکیوٹرکوٹریننگ دی جارہی ہے،جاویداقبال
  • National :- اسلام آباد:24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 5026 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • National :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 10 لاکھ 34 ہزار 837 ہوگئی،این سی اوسی

افغان مشیربرائے قومی سلامتی امن کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کر رہے ہیں:شاہ محمود

Published On 05 June,2021 06:54 pm

ملتان: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان کا بیانیا امن کا بیانیا ہے۔ افغانستان کے مشیر حمد اللہ محب امن میں رکاوٹیں کھڑی کر رہے ہیں۔ خدانخواستہ افغانستان میں خانہ جنگی ہوگی توپاکستان کونقصان ہو گا۔

ملتان میں شاہ رکن عالم انٹرچینج پر پی ٹی آئی کے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمودقریشی افغانستان کے مشیرافغانستان کے امن میں رکاوٹیں کھڑی کررہے ہیں، افغانستان سے متعلق وزیراعظم عمران خان کی سوچ کوآج دنیا میں پذیرائی مل رہی ہے، پاکستان پرالزام لگانے والے آج مذاکرات پرقائل ہوگئے ہیں، افغانستان میں امن واستحکام کے لیے ہماری کاوشیں جاری رہیں گی۔

 انہوں نے کہا کہ افغانستان کے نیشنل سکیورٹی ایڈوائزر کان کھول کرسن لو، پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بڑی قربانیاں دیں، افغانستان کے نیشنل ایڈوائزرنے اگرزبان درازی بند نہ کی توکوئی پاکستانی تم سے ہاتھ ملائے گا نا گفتگوکرے گا، وزیراعظم عمران خان، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ، وزیرخارجہ شاہ محمود افغانستان میں امن کے لیے جاتے ہیں، ہمسایہ ملک کے نیشنل ایڈوائزر کو شرم آنی چاہیے، افغانستان کے مشیر کی ننگرہارکی تقریرسن کرمیرا خون خول رہا ہے۔

اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں جنگ سے مسئلہ حل نہیں ہوا، افغانستان میں دنیا کی بہترین ٹیکنالوجی کے باوجود فوجی میدان میں کامیابی نہیں ہوئی، ہمسایہ ملک میں مسئلے کا حل صرف مذاکرات ہے، افغانستان قومی سلامتی کے مشیرامن دشمن کا کردارادا کررہے ہیں، ہم نے دنیا کوواضح طورپربتایا ہے کہ امن کے دشمن کون ہے، ہم نے فہم فراست سے امن کے دشمنوں کوناکام کرنا ہے، ہمسایہ ملک کے عوام امن چاہتے ہیں، افغانوں کو مل بیٹھ کراپنے مستقبل کا فیصلہ کرنا ہے، افغانستان میں امن سے پاکستان کوفائدہ ہوگا، خدانخواستہ افغانستان میں خانہ جنگی ہوگی توپاکستان کونقصان ہوگا، افغانستان میں خانہ جنگی پاکستان اورخطے کے مفاد میں نہیں ہے، پاکستان کا بیانیا امن کا بیانیا ہے۔

ایف اے ٹی ایف سے متعلق بات چیت کرتے ہوئے وفاقی وزیر خارجہ نے کہا کہ کچھ طاقتوں نے فیٹیف کے پلیٹ فارم کوسیاست کی نذرکرنے کی کوشش کی، فیٹف اجلاس میں پاکستان کی کوششوں کوسراہا گیا،فیٹیف میں ہمیں کامیابی مل رہی ہے، اب پاکستان کومزید گرے لسٹ میں رکھنے کا جوازنہیں رہ گیا، مسلم لیگ کی حکومت سے ہمیں گرے لسٹ ملی تھی، عمران خان کی قیادت میں گرے لسٹ سے نکل کر ملک سفید لسٹ کی طرف بڑھ رہا ہے، اگرفیٹیف میں میرٹ پر فیصلہ ہوا تواگلے ماہ پاکستان کوکامیابی ملے گی۔

فلسطین سے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ غزہ میں25منٹ پر125بم گرائے گئے۔ اسرائیل نے نہتے فلسطینیوں پرظلم کیا، فلسطینی کہتے ہیں انصاف دو، جو کچھ فلسطینی کہہ رہے ہیں وہی کشمیری بھی کہہ رہے ہیں، فلسطین مظالم پرنیویارک،واشنگٹن،لندن،کینیڈا میں مظاہرے ہوئے، اجلاس میں مصرکے وزیرخارجہ نے بتایا اسرائیل فائربندی پرآمادہ ہوگیا ہے، پاکستان نے اوآئی سی کے ساتھ مل کرجنیوا میں قرارداد پیش کی، جنیوا میں قرارداد ہماری دوسری کامیابی تھی۔ اوآئی سی،عرب لیگ کے پلیٹ فارم سے فلسطین کا مقدمہ پیش کیا، سلامتی کونسل کی چارنشستیں بے نیتجہ رہی، پاکستان نے اوآئی سی کے پلیٹ فارم پرفلسطین کی وکالت کی۔

اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ،سینیٹ کی متفقہ قرارداد نے ثابت کردیا فلسطین، کشمیرمسئلے پر قوم ایک ہے، جس طرح دبانگ دہل فلسطینیوں کا مقدمہ لڑا، مارچ 2022ء کو اسلام آباد میں پورے عالم اسلام کے وزرائے خارجہ کواکٹھا کرکے کشمیریوں کا مقدمہ لڑوں گا۔ کروڑوں لوگوں نے سوشل میڈیا پرمیرا دفاع کیا، میرا انٹرویو 30لاکھ لوگوں نے دیکھا معمولی بات نہیں۔ جب یہودی لابی نے سوشل میڈیا پرمجھ پرحملہ کیا توپاکستان کے بچے،بچے نے میرا دفاع کیا۔

خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کا قبلہ ایک نہیں مگرمقصد بند گلی سے فرارکا راستہ مل جائے، پی ڈی ایم کوکہوں گا آگ لگ گئی تمہارے اتحاد کو ملتان کے چراغ سے، یہ کیسی حزب اختلاف ہے کہتی ہے میں نا مانوں، ملتان نے ہرسیاسی جدوجہد میں ہراول دستے کا کردارادا کیا ہے۔

بجٹ سے متعلق انہوں نے کہا کہ پنجاب میں بجٹ کوکوئی خطرہ نہیں، بجٹ کے حوالے سے قیاس آرائیاں کی جارہی ہے، ہمارے سمجھداردوست بجٹ میں رکاوٹ نہیں ڈالیں گے۔