تازہ ترین
  • بریکنگ :- پنجاب کابلدیاتی ایکٹ چندروزمیں منظورہوجائےگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پنجاب میں ویلج کونسل کانیااسٹرکچرآئےگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بلدیاتی الیکشن ای وی ایم کےذریعےہوں گے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- الیکشن کمیشن درست طریقےسےآگےبڑھ رہاہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- حکومت الیکشن کمیشن کوہرممکن مددفراہم کرےگی،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ایسانہیں کہ ای وی ایم بہت مہنگی ہوگی ،وفاقی وزیراطلاعات
  • بریکنگ :- ای وی ایم ایک ہی بارخریدی جائیں گی باربارنہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- سندھ حکومت ہمیشہ معاملات خراب کرنےکاکرداراداکرتی ہے،فواد چودھری
  • بریکنگ :- سندھ حکومت ہیلتھ کارڈکےمعاملےپرپریشان ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ہیلتھ کارڈکی فراہمی سےوزرانہیں عام آدمی کوفائدہ ہوگا،فوادچودھری
  • بریکنگ :- الیکشن مہنگےنہیں ہوں گے،معمول کےاخراجات آئیں گے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- مہنگائی میں کمی آرہی ہے،وزیراطلاعات فواد چودھری
  • بریکنگ :- مسلم لیگ(ن)،پیپلزپارٹی کی کرتوتوں کی وجہ سےایسےحالات ہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- شاہدخاقان عباسی کوکہتاہوں کہ اعدادوشمارپڑھ لیاکریں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن نہیں چاہتی الیکشن نظام میں اصلاحات لائی جائیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- اپوزیشن کوپہلےدن سےانتخابی اصلاحات پربلارہےہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- پی ڈی ایم تھکے ہوئے پہلوانوں کا اجتماع ہے،فواد چودھری

خیبرپختونخوا: کورونا ویکسین کے اعداد و شمار میں فرق، ویکسین کی تعداد کم لیکن اندراج زیادہ

Published On 29 July,2021 11:26 am

پشاور: (دنیا نیوز) خیبرپختونخوا میں کورونا ویکسین کے اعداد و شمار میں فرق سامنے آگیا۔ 17 اضلاع میں ویکسین کی تعداد کم لیکن اندراج زیادہ ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ ویکسییشن نہ کروانے والے افراد کو بھی رجسٹرڈ کیا گیا، ہسپتالوں اور نیشنل ایمونائزیشن سروسز کے اعداد و شمار میں تضاد سامنے آیا، ایچ ایم سی میں ایک ہزار 795 افراد کا اندراج زیادہ کیا گیا، لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں فراہم کردہ ویکسین سے 395 افراد کا زیادہ اندراج ہوا۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ کے ٹی ایچ میں بھی فراہم کردہ ویکسین سے 193 افراد زیادہ درج ہوئے، مردان میں 4 ہزار 296 افراد کا ویکسین کی تعداد سے زائد اندراج کیا گیا۔ پشاور سمیت 17 اضلاع میں ویکسین لگوائے بغیر اندراج کا بھی انکشاف ہوا ہے۔

ڈی جی ہیلتھ کا کہنا ہے کہ ہسپتالوں میں بغیر ویکسین انداراج کی انکوائری شروع کر دی، ڈی ایچ اوز کو شکایات کی چھان بین کی ہدایات جاری کر دیں، بغیر ویکسین اندراج میں ملوث افراد کے خلاف سخت کاروائی ہوگی۔