تازہ ترین
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کاطارق محمودالحسن کےگھرپرچھاپہ،گرفتاری عمل میں نہیں آئی
  • بریکنگ :- لاہور:پی ٹی آئی کےبانی کارکن ملک اشتیاق کےگھرپولیس کاچھاپہ
  • بریکنگ :- نامعلوم مقام پرہونےکی وجہ پولیس ملک اشتیاق کوگرفتارنہ کرسکی
  • بریکنگ :- لاہور:شیراکوٹ میں پی ٹی آئی رہنماسعیداحمدخان کےگھرپرپولیس کاچھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:سعیداحمدخان گھرپرموجودنہیں تھے،خاندانی ذرائع
  • بریکنگ :- پی ٹی آئی ایم پی اےچودھری اخلاق کےگھرپرپولیس کاچھاپہ
  • بریکنگ :- چودھری اخلاق کےگھرسےکوئی گرفتاری عمل میں نہیں آسکی
  • بریکنگ :- شمالی لاہورمیں تحریک انصاف کےکارکنوں کےگھروں پرچھاپے
  • بریکنگ :- لاہور:سابق چیئرمین یوسی 25 بلال بٹ کابھائی گرفتار
  • بریکنگ :- لاہور:چودھری عامر،ماسٹرفیاض،راناعامرکےگھروں پربھی چھاپے
  • بریکنگ :- لاہور:ملک اویس ظہورممبرکنٹونمنٹ بورڈوراڈنمبرایک کےگھرچھاپہ
  • بریکنگ :- کبھی قانون نہیں توڑا،ایساکسی تہذیب والےمعاشرےمیں نہیں ہوتا،ناصرہ جاویداقبال
  • بریکنگ :- مسرت جمشیدچیمہ کےگھرپولیس کاایک اورچھاپہ
  • بریکنگ :- پولیس نےگارڈرمضان ودیگرملازمین کوگرفتارکرلیا،مسرت جمشیدچیمہ
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کاپی ٹی آئی رہنمامحمودالرشیدکےگھرپرچھاپہ،گرفتاری عمل میں نہ آسکی
  • بریکنگ :- لاہور:غازی آبادمین بازارنمبر 2کےصدرسمیت متعددافرادگرفتار
  • بریکنگ :- لاہور:پی ٹی آئی عہدیداروں اورکارکنوں کےخلاف کریک ڈاؤن
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس نے150سےزائدکارکنوں کوحراست میں لےلیا،پولیس
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کامیاں اسلم اقبال کےگھرپرچھاپہ
  • بریکنگ :- پولیس نےمیاں اسلم اقبال کےبھائی میاں افضل اقبال کوگرفتارکرلیا
  • بریکنگ :- پولیس کااعجازچودھری،میاں اکرم عثمان،عقیل صدیقی کےگھرپربھی چھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کاجوہرٹاؤن میں رہنماپی ٹی آئی سعدیہ سہیل راناکےگھرپرچھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:چھاپےکےوقت سعدیہ سہیل رانا گھرپرموجود نہیں تھیں
  • بریکنگ :- لاہور:تحریک انصاف کےمرکزی دفترکےباہرپولیس نفری موجود
  • بریکنگ :- پولیس کاتحریک انصاف لاہورکےنائب صدرملک وقارکےڈیرےپرچھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کاگارڈن ٹاؤن میں رہنماپی ٹی آئی فرخ جاویدمون کےگھرپرچھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:محمدبشارت راجہ کی رہائشگاہ دھمیال ہاؤس پرپولیس کاچھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:ملازمین سےپوچھ گچھ،راجہ بشارت گھرپرموجود نہیں تھے
  • بریکنگ :- لاہور:حماداظہرکی رہائشگاہ کےباہرسےمتعددکارکن زیرحراست
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کااسلام پورہ میں رہنماپی ٹی آئی علی نویدکےگھرپرچھاپہ
  • بریکنگ :- لاہور:رہنماپی ٹی آئی سمیع اللہ چودھری کےگھرپولیس کاچھاپہ،بھائی گرفتار
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کےسیداویس بخاری اورغلام مصطفیٰ کےگھروں پرچھاپے
  • بریکنگ :- لاہور:ملک اویس ظہورکے2بھائیوں کوگرفتارکرلیاگیا
  • بریکنگ :- لاہور:پولیس کاگلبرگ میں سینیٹرولیداقبال کی رہائشگاہ پرچھاپہ
  • بریکنگ :- سینیٹرولیداقبال اسلام آبادمیں ہونےکی وجہ سےگرفتارنہ ہوسکے
  • بریکنگ :- پولیس نےرات 2بجےبغیروارنٹ میرےگھرچھاپہ مارا،گیٹ توڑدیا،ناصرہ جاویداقبال
  • بریکنگ :- پولیس والےسینیٹرولیداقبال کوڈھونڈرہےتھے،ناصرہ جاویداقبال

نیب کی ٹیم سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو گرفتار کرنے گھر پہنچ گئی

Published On 13 October,2021 06:21 pm

کراچی: (دنیا نیوز) نیب نے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کی گرفتاری کیلئے ان کے گھر پر چھاپہ مارا ہے۔

سندھ ہائیکورٹ سے درخواست ضمانت مسترد ہونے کے بعد آغا سراج درانی کی گرفتاری کیلئے نیب ٹیم ان کی رہائشگاہ پہنچ گئی۔ جہاں پر گزشتہ دو گھنٹے گزر جانے کے باوجود نیب کی ٹیم آغا سراج درانی کو گرفتار نہ کر سکی۔ جس کے بعد نیب ٹیم نے اضافی ٹیم طلب کرلی ہے۔

دوسری طرف آغا سراج کے حامیوں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔

اُدھر آغا سراج کے عزیز آغا اسد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گھر میں فیملی موجود ہے، چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال نہیں کرنے دینگے، نیب کی ٹیم کو گھر میں جانے کی اجازت نہیں دینگے۔

اس سے قبل سندھ ہائیکورٹ نے اثاثہ جات کیس میں سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی سمیت 8 ملزمان کی درخواست ضمانت مسترد کر دی۔

جسٹس ندیم اختر اور جسٹس اقبال کلہوڑو نے گذشتہ ہفتے فیصلہ محفوظ کیا تھا۔ سندھ ہائیکورٹ نے آغا سراج درانی اور دیگر کی ضمانت پر فیصلہ جاری کیا۔ عدالت نے آغا سراج کی اہلیہ، بیٹا، تین بیٹیاں اور ایک ملزم کی درخواست ضمانت منظور کرلی۔

خیال رہے اسپیکر سندھ اسمبلی پر ایک ارب سے زائد غیر قانونی آمدن سے اثاثے بنانے کا الزام ہے۔ ملزمان کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس زیر سماعت ہے۔ سندھ ہائیکورٹ آغا سراج درانی اور دیگر کی ضمانت منظور کر چکی تھی۔

نیب نے ہائیکورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔ سپریم کورٹ نے ضمانتوں پر دوبارہ دلائل سننے کے لئے معاملہ واپس ہائیکورٹ بجھوایا تھا۔ چیف جسٹس ہائیکورٹ نے ضمانت پر فیصلے کے لئے دو ججز پر خصوصی بینچ تشکیل دیا تھا۔