سودی نظام قائم رکھنے والے حکمرانوں کیخلاف جنگ کا اعلان کرتے ہیں، سراج الحق

Published On 21 July,2023 07:45 pm

ملتان: (دنیا نیوز) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ ہم سودی نظام قائم رکھنے والے حکمرانوں کے خلاف جنگ کا اعلان کرتے ہیں۔

ملتان میں حرمت سود سیمینار سے خطاب میں امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ یہ سیمینار سود کے خلاف اعلان جنگ اور جہا د ہے، ہماری یہ مہم پاکستان میں مکمل سودی نظام کے خاتمہ تک جاری رہے گی، راولپنڈی کے محمد مسعود نے سودی نظام کی وجہ سے بیوی بچوں کے ساتھ خودکشی کی، حق اور سچ کا تقاضا ہے کہ حکمرانوں کے گریبان پکڑے جائیں۔

انہوں نے کہا ہم 90 فیصد مسلمان ہیں، اللہ نے فرمایا ہے سود میرے ساتھ جنگ ہے، قائد اعظم نے کہا تھا کہ پاکستان میں سودی نظام ختم کیا جائے مگر قائد اعظم کی رحلت کے بعد سے آج تک سودی نظام قائم ہے، ہم سودی نظام قائم رکھنے والے حکمرانوں کے خلاف جنگ کا اعلان کرتے ہیں۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ حضرت عمر فاروق کی 22 لاکھ مربع میل پر حکومت تھی، اس زمانے میں سودی نظام نہیں عدل کا نظام تھا، پی ڈی ایم کی 13 جماعتوں کا امام ایک عالم دین ہے، ہمیں امید تھی کہ سودی نظام کا خاتمہ ہوگا، 13 اگست کو حکومت کا خاتمہ ہونے والا ہے لیکن انہوں نے سودی نظام ختم نہیں کیا۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ پاکستان میں قرضہ ملنے پر وزیراعظم نے مبارکباد دی، قرض ملنے پر مبارکباد ایسے دی جیسے سری نگرمیں جھنڈا لہرایا ہو، ورلڈ بینک، آئی ایم ایف کے قرضوں سے ترقی نہیں ہوسکتی، قرض، کرپشن اور مس مینجمنٹ کوختم کرنا ہوگا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اگراسلامی اورخوشحال پاکستان چاہتے ہیں تو جماعت اسلامی کولانا ہوگا، ہمارا کوئی ذاتی ایجنڈا نہیں، نواز شریف مریم نواز اور زرداری بلاول کو وزیراعظم بنانا چاہتے ہیں، جب قومی اسمبلی میں مزدور جائے گا تو ہی مزدور کی زندگی میں انقلاب آئے گا۔

Advertisement