تازہ ترین
  • بریکنگ :- کوئٹہ:وزیراعلیٰ بلوچستان کی زیرصدارت ایپکس کمیٹی کا اجلاس
  • بریکنگ :- کوئٹہ:لیفٹیننٹ جنرل سرفرازعلی ،ڈپٹی اسپیکرقومی اسمبلی کی شرکت
  • بریکنگ :- کوئٹہ:چیف سیکرٹری بلوچستان اور پلاننگ کمیشن حکام کی شرکت
  • بریکنگ :- کوئٹہ:شرکاکو پیکج میں شامل منصوبوں کی پیشرفت پر بریفنگ
  • بریکنگ :- پیکج میں مختلف سیکٹرز کے 122 منصوبے شامل ہیں،بریفنگ
  • بریکنگ :- کوئٹہ:اجلاس میں پیکج پر عملدرآمد کی رفتار تیز کرنے کیلئےفیصلے
  • بریکنگ :- کوئٹہ:منصوبوں کی مانیٹرنگ کیلئے کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی
  • بریکنگ :- وفاقی سیکرٹری پلاننگ کی سربراہی میں کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی
  • بریکنگ :- چیف سیکرٹری بلوچستان کی سربراہی میں بھی کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی،فیصلہ
  • بریکنگ :- منصوبوں میں حائل رکاوٹوں کو جلددورکیا جائےگا،اجلاس میں فیصلہ
  • بریکنگ :- منصوبےجلدمکمل کرکےعوام تک ان کےثمرات پہنچائےجائیں،وزیراعلیٰ کی ہدایت
  • بریکنگ :- وزیراعظم کی بلوچستان کی ترقی سےمتعلق دلچسپی حوصلہ افزاہے،وزیراعلیٰ بلوچستان
  • بریکنگ :- وزیراعظم شمالی بلوچستان پیکج کا جلد اعلان کریں گے،وزیراعلیٰ بلوچستان

کشمیر میں انسانی حقوق کی خوفناک صورتحال،اقوام متحدہ کا فوری کارروائی کا مطالبہ

Last Updated On 05 August,2020 06:29 pm

جنیوا: (دنیا نیوز) اقوام متحدہ نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خوفناک صورت حال پر فوری کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

 

جنیوا میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندوں کا کہنا تھا کہ اگر بھارت مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی کی تحقیقات نہیں کرتا تو عالمی برادری کو آگے بڑھ کر یہ قدم اٹھانا چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس حوالے سے بھارت کو لکھے گئے خطوط کا کوئی جواب موصول نہیں ہوا۔ انہوں نے تحقیقات کے لیے بھارت سے انسانی حقوق کے کمیشن کے دوروں کا شیڈول بھی جلد جاری کرنے کا مطالبہ کیا۔

ادھر سپین کے شہر بارسلونا میں بھارتی قونصل خانہ کے باہر شدید احتجاج کیا گیا ہے۔ شرکا نے کشمیر اور پاکستان کے پرچم لہراتے ہوئے بھارتی قونصلیٹ کے باہر مارچ کیا۔

شرکا کا کہنا تھا کہ 70 سال پہلے جو کشمیری پیدا ہوا تھا، وہ اپنی پیدائش سے لے کر اب تک قید میں ہی ہے۔ کشمیر کی آزادی تک بھارت کا پیچھا نہیں چھوڑیں گے۔

ہانگ کانگ میں بھی یوم استحصال پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے بس ریلی نکالی گئی۔ ڈبل ڈیکر بس کی چھت پر کشمیر کے جھنڈے لہرائے گئے اور کشمیری ترانے بجتے رہے۔ پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی کا کہنا تھا کہ بھارتی مظالم کو سورج غروب ہونےکو ہے، بہت جلد کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہوگا۔